ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سوشل میڈیا پر وطن مخالف تبصرہ کرنے پرعلی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے کشمیری طالب علم کا اخراج

سوشل میڈیا پر وطن مخالف تبصرہ کرنے کے الزام میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) نے ایک پوسٹ گریجویٹ کشمیری طالب علم کو نکال دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 20, 2016 04:32 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سوشل میڈیا پر وطن مخالف تبصرہ کرنے پرعلی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے کشمیری طالب علم کا اخراج
سوشل میڈیا پر وطن مخالف تبصرہ کرنے کے الزام میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) نے ایک پوسٹ گریجویٹ کشمیری طالب علم کو نکال دیا ہے۔

علی گڑھ ۔  اوڑی میں دہشت گردانہ حملہ اور شہیدوں کے بارے میں سوشل میڈیا پر وطن مخالف تبصرہ کرنے کے الزام میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) نے ایک پوسٹ گریجویٹ کشمیری طالب علم کو نکال دیا ہے۔ علی گڑھ کے سول لائنس تھانہ کے تحت میڈیکل چوکی میں کشمیری طالب علم مدثر یوسف لون کے خلاف تعزیرا ت ہند کی دفعہ 505 کے تحت ایف آئی آر درج کی گئي ہے۔ اس کے ساتھ ہی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے حکام نے اس کو یونیورسٹی ہاسٹل سے بھی باہر کردیا ہے۔


اے ایم یو کے وائس چانسلر لیفٹننٹ جنرل ضمیر الدین شاہ نے گزشتہ روز کشمیری طالب علم کے وطن مخالف تبصرے کی خبریں آنے کے بعد اس کو خارج کرنے کا فیصلہ کیا۔ سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولس راجیش پانڈے نے یو این آئی کو بتایا کہ پولس نے اس معاملے میں سول لائنس تھانہ میں بھی ایک کیس درج کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر ی طالب علم کی طرف سے وطن مخالف تبصرے کا نوٹس لیتے ہوئے اے ایم یو انتظامیہ کو اس کی اطلاع دی گئی تھی اور انہيں انکوائری کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔ معاملے کی جانچ کے بعد اے ایم یو نے پوسٹ گریجویٹ کے کشمیری طالب علم کو یونیورسٹی سے خارج کردیا ہے۔


یہ کشمیری طالب علم وادی کشمیر کے کپواڑہ سے تعلق رکھتا ہے اور ایم ایس سی کے تیسرے سال کا طالب علم تھا اور یونیوسٹی کے ایم ایم ہال میں رہتا تھا۔

First published: Sep 20, 2016 04:32 PM IST