ہوم » نیوز » No Category

روہت ویمولا کے بھائی کو کیجریوال نے آفر کی کلرک کی نوکری ، آئے تنقید کی زد پر

نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے بھائی کو کلرک کی نوکری کی پیشکش کی ہے ، جس کے بعد ان پر تنقید شروع ہو گئی ہے ۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Apr 13, 2016 10:17 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
روہت ویمولا  کے بھائی کو کیجریوال نے آفر کی کلرک کی نوکری ، آئے تنقید کی زد پر
نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے بھائی کو کلرک کی نوکری کی پیشکش کی ہے ، جس کے بعد ان پر تنقید شروع ہو گئی ہے ۔

نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے بھائی کو کلرک کی نوکری کی پیشکش کی ہے ، جس کے بعد ان پر تنقید شروع ہو گئی ہے ۔ حیدرآباد یونیورسٹی کے کچھ طلبہ نے اسے توہین آمیز قرار دیا ہے ۔ طالب علموں کا کہنا ہے کہ کیجریوال نے راجا ویمولا کو کلرک کی ملازمت کی پیشکش کر کے اس کی تعلیمی قابلیت کی توہین کی ہے ۔


خیال رہے کہ روہت کا بھائی راجا ویمولا کے پاس پڈوچیری سینٹرل یونیورسٹی سے ماسٹرز کی ڈگری کی ہے ۔ علاوہ ازیں اس نے قومی اہلیتی امتحان بھی پاس کیا ہے ، جس کی وجہ سے وہ ملک کے کسی بھی یونیورسٹی میں اسسٹنٹ پروفیسر کے عہدہ پر تقرری کے معیار کو پورا کرتا ہے ۔ کیجریوال حکومت نے اپنے وعدے کے مطابق 4 اپریل کو راجا کو آفر لیٹر بھیجا ۔ جس میں انہیں کلرک کا عہدہ آفر کیا گیا ہے ۔ لیٹر کے بعد حیدرآباد یونیورسٹی کے کچھ طلبہ نے اس پیشکش کے لئے کیجریوال پر نشانہ سادھا ۔


خیال رہے کہ 24 فروری کو حیدرآباد یونیورسٹی میں دلت ریسرچ اسکالر روہت ویمولا کی خود کشی کے بعد سی ایم کیجریوال اس کے کنبہ سے ملاقات کی تھی ،  جہاں انہوں نے ہمدردی کے طور پر ان کے بھائی کو نوکری دینے کا وعدہ کیا تھا ۔

First published: Apr 13, 2016 10:17 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading