ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی پر کیرتی آزاد نے کی پریس کانفرنس، فنڈ میں خرد برد کا دعوی

نئی دہلی۔ ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی پر سابق کرکٹر اور بی جے پی ممبر پارلیمنٹ کیرتی آزاد نے ایک اسٹنگ دکھا کر کرکٹ یونین میں جعلسازی کا دعوی کیا ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Dec 20, 2015 04:59 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی پر کیرتی آزاد نے کی پریس کانفرنس، فنڈ میں خرد برد کا دعوی
نئی دہلی۔ ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی پر سابق کرکٹر اور بی جے پی ممبر پارلیمنٹ کیرتی آزاد نے ایک اسٹنگ دکھا کر کرکٹ یونین میں جعلسازی کا دعوی کیا ہے۔

نئی دہلی۔ ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی پر سابق کرکٹر اور بی جے پی ممبر پارلیمنٹ کیرتی آزاد نے ایک اسٹنگ دکھا کر کرکٹ یونین میں جعلسازی کا دعوی کیا ہے۔ انکشاف سے پہلے کیرتی آزاد نے کہا کہ وہ کسی پر ذاتی حملہ نہیں کر رہے ہیں، خود وہ وزیر اعظم کے بڑے فین ہیں۔ مودی نے بدعنوانی کو ہٹانے کے لئے کافی کام کیا ہے۔


کیرتی آزاد نے دہلی کرکٹ بورڈ میں مبینہ بدعنوانی پر 28 منٹ کا ویڈیو دکھایا۔ اسٹنگ کے مطابق، ڈی ڈی سی اے میں کانٹریکٹ حاصل کرنے والی کمپنیاں مکمل طور پر فرضی ہیں۔ بی سی سی آئی ملک بھر کے کرکٹ ایسوسی ایشن کو اسٹیڈیم اور باقی چیزوں کو بہتر بنانے کے لئے فنڈز دیتی ہے لیکن ڈی ڈی سی اے نے اس کا بڑے پیمانہ پر غلط استعمال کیا ہے۔


اسٹنگ کے مطابق، ایک کمپنی کی رسید میں اس کا نمبر 9 اعداد کا تھا۔ اسٹنگ بنانے والی وکی لیکس فار انڈیا نے تفصیلات کے لئے ایک دکان سے رابطہ کیا۔ ٹیم کو پتہ چلا کہ بورڈ نے 17 ہزار روپے / روزانہ کی قیمت پر ایک لیپ ٹاپ کرایہ پر لیا اور 5 ہزار روپے / فی دن کی قیمت پر پرنٹر۔


ویڈیو کے مطابق، جنیسس نیٹ لیب پرائیویٹ لمیٹڈ نام کی کمپنی کا پتہ مدھو وہار، دہلی میں بتایا گیا لیکن انکوائری کرنے پر ایسی کوئی بھی کمپنی نہیں پائی گئی۔ ایسا ہی صفدر جنگ انکلیو کی ایک کمپنی کے ساتھ ہوا۔
First published: Dec 20, 2015 04:59 PM IST