உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فضائی حملہ میں ابھینندن کی مددگار بنی تھیں یہ خاتون آفیسر، ملے گا اعزاز

    ابھینندن۔ جنگی طیارے۔ فائل فوٹو۔ فوٹو پی ٹی آئی۔

    ابھینندن۔ جنگی طیارے۔ فائل فوٹو۔ فوٹو پی ٹی آئی۔

    وقت رہتے کنٹرول روم میں بیٹھی ایک خاتون اسکواڈرن لیڈر نے اپنی سوجھ بوجھ اور بروقت اقدام سے حملہ کو ناکام بنانے میں بھر پور ساتھ دیا تھا۔

    • Share this:
      پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے بعد جب ہندوستان نے پاکستان کے بالاکوٹ میں فضائی حملہ کر کے وہاں واقع دہشت گردانہ کیمپوں کو تباہ کر دیا تو اس سے پاکستان بوکھلا اٹھا۔ بدلہ لینے کے لئے پاکستان نے بھی ہندوستانی سرحد میں گھس کر حملہ کیا۔ لیکن وقت رہتے کنٹرول روم میں بیٹھی ایک خاتون اسکواڈرن لیڈر نے ہندوستان کے جنگی طیاروں کو الرٹ کر دیا۔ اس نے اپنی سوجھ بوجھ اور بروقت اقدام سے حملہ کو ناکام بنانے میں بھر پور ساتھ دیا تھا۔ اس پورے واقعہ میں ونگ کمانڈر ابھینندن کی بہادری کی تو خوب چرچا ہوئی لیکن کارروائی کو کامیاب بنانے میں جن دیگر لوگوں کا ہاتھ تھا ان میں سے کئی نام گمنام رہ گئے۔ انہیں میں ایک خاتون اسکواڈرن لیڈر بھی تھیں۔

      وہ خاتون لیڈر کون ہیں، ان کا نام کیا ہے، یہ ساری معلومات اب تک سامنے نہیں آئی ہیں اور شاید سامنے آئیں بھی نا۔ سیکورٹی لحاظ سے ہو سکتا ہے ان کا نام ظاہر نہ کیا جائے لیکن ہندوستانی فضائیہ ان کی بہادری کے لئے ضرور انہیں اعزاز سے نوازے گی۔ ملی معلومات کے مطابق، فضائیہ کی خصوصی سروس میڈل کے لئے ان کے نام کی سفارش کی گئی ہے۔

      نو بھارت ٹائمس کے مطابق، خاتون اسکواڈرن لیڈر فضائیہ میں فائٹر کنٹرولر کے رول میں ہیں۔ فی الحال پنجاب میں واقع آئی اے ایف کے ایک رڈار کنٹرول اسٹیشن پر ان کی پوسٹنگ ہے۔ گزشتہ 27 فروری کو جب پاکستان کی طرف سے تقریبا 24 ایف -16، جے ایف -17 ایس اور میراج 5 سے حملہ کیا گیا تو فائٹر کنٹرولر نے اس کشیدگی بھرے ماحول کو کافی اچھے سے سنبھالا اور مسلسل ہندوستانی فائٹر پائلٹس کو پاکستانی جیٹس کی جانکاری دیتی رہیں۔
      First published: