ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لاک ڈاؤن میں کس طرح مساجد میں کیا جا رہا ہے اعتکاف کا اہتمام، جانئے یہاں

میرٹھ کی شاہی جامع مسجد میں ہر سال کی طرح اس مرتبہ بھی دو افراد اعتکاف میں بیٹھ کر مخصوص عبادتوں کے ساتھ ملک اور ملّت کی سلامتی اور اس مہلک وبا سے نجات کی دعا کر رہے ہیں۔

  • Share this:
لاک ڈاؤن میں کس طرح مساجد میں کیا جا رہا ہے اعتکاف کا اہتمام، جانئے یہاں
لاک ڈاؤن میں کس طرح مساجد میں کیا جا رہا ہے اعتکاف کا اہتمام، جانئے یہاں

میرٹھ۔ ماہ رمضان میں یوں تو پورے مہینے عبادتوں کی خاص فضیلت ہے  لیکن رمضان کے آخری عشرے میں کی جانے والی عبادتیں سب سے افضل ہیں۔ ماہ رمضان کے آخری عشرے میں کچھ روزےدار گوشہ نشینی اختیار کرکے مسجدوں میں عبادت میں مشغول ہو جاتے ہیں جسے اعتکاف کہتے ہیں ، لیکن اس سال ماہ رمضان میں لاک ڈاؤن کے سبب احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے روزے دار اپنے علاقے کی مساجد میں اعتکاف کا اہتمام کر رہے ہیں۔ میرٹھ کی شاہی جامع مسجد میں ہر سال کی طرح اس مرتبہ بھی دو افراد اعتکاف میں بیٹھ کر مخصوص عبادتوں کے ساتھ ملک اور ملّت کی سلامتی اور اس مہلک وبا سے نجات کی دعا کر رہے ہیں۔


شہر کی شاہی جامع مسجد میں اعتکاف پر بیٹھے مقامی بزرگ بابو میاں کا کہنا ہے کہ گزشتہ بیس برسوں سے  وہ ہر سال اعتکاف کا اہتمام کرتے ہیں اور بیس سالوں سے شاہی جامع مسجد میں ہی اعتکاف میں بیٹھتے ہیں۔ اس سال کورونا وبا کے خطرے کے باعث ملک بھر میں مساجد میں تالے لگ گئے ہیں لیکن پھر بھی مساجد میں چند افراد احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے نماز اور عبادتوں کا اہتمام کر رہے ہیں۔ ایسے میں ماہ رمضان کے آخری عشرے میں اسے روایتی طریقہ سے وہ بھی اعتکاف کا اہتمام کر رہے ہیں اور خصوصی عبادتوں کا اہتمام کرتے ہوئے ملک اور ملّت کی سلامتی اور مہلک وبا سے نجات کے دعائیں کر رہے ہیں۔


میرٹھ : کورونا کے بڑھتے معاملات سے نمٹنے کیلئے ضلع انتظامیہ نے بنائی نئی حکمت عملی ، جانئے کیا ہے وہ


شہر قاضی اور شاہی امام جامع مسجد زین الساجدین کے مطابق اعتکاف سنت مؤکدہ ہے اور محلہ کے کسی ایک شخص کو اعتکاف میں ضرور بیٹھنا چاہیے۔ کسی ایک شخص کے بھی اعتکاف میں بیٹھنے سے تمام اہل محلہ کی مغفرت کا ذریعہ ثابت ہو سکتی ہے۔ اعتکاف میں بیٹھنے والے افراد کا ہر لمحہ عبادت میں شمار ہوتا ہے۔
First published: May 20, 2020 09:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading