ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لوک سبھا الیکشن کے درمیان پولنگ بوتھ کے پاس کھیل رہی 9 سالہ بچی کا ریپ

ملزم بچی کے پاس آیا اور اسے دس روپئے دئے اور کہا کہ پاس کی دکان سے وہ کرکرے لے آئے۔ جب بچی دکان جا رہی تھی تو ملزم نے راستے میں کھنڈر میں اس کا ریپ کیا۔

  • Share this:
لوک سبھا الیکشن کے درمیان پولنگ بوتھ کے پاس کھیل رہی 9 سالہ بچی کا ریپ
یہ ایکٹ بچوں کو جنسی طور پر ہراساں کرنا، سیکسوئل حملہ اور پونوگرافی جیسے سنگین جرائم سے تحفظ دیتا ہے۔

ہماچل پردیشن کی دیو بھومی کلو ضلع کو شرمسار کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ یہاں ایک لوک سبھا انتخابات کے بنائے گئے پولنگ بوتھ کے پاس ایک نو سال کی بیٹی سے ریپ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ بچی کی ماں کی شکایت پر پولیس نے کیس درج کرلیا ہے۔


معلومات کے مطابق کلو کے آنی کا یہ معاملہ ہے۔ آنی تھانے میں 9 سال کی بچی کی عصمت دری کا معاملہ درج ہوا ہے۔ جانکاری کے مطابق 19 مئی یعنی اتورا کو آنی تھانے میں لوک سبھا الیکشن کیلئے پولنگ ہو رہی تھی۔ مقامی اسکول میں پولنگ بوتھ بنایا گیا تھا۔ اسی اسکول کے گراؤنڈ میں یہ بچی اپنی سہیلی کے ساتھ کھیل رہی تھی۔ بچی کی ماں کھیتوں میں کام کرنے کیلئے گئی تھی اور بچی کو دادا۔دادی کے پاس چھوڑا تھا۔


اس دوران ملزم بچی کے پاس آیا اور اسے دس روپئے دئے اور کہا کہ پاس کی دکان سے وہ کرکرے لے آئے۔ جب بچی دکان جا رہی تھی تو ملزم نے راستے میں کھنڈر میں اس کا ریپ کیا۔


ملزم کی پہچان دیویندر سنگھ، گاؤں بھریش، آنی کے طور پر ہوئی ہے۔ وہ ایک شادی شدہ ہے۔ فی الحال پولیس نے بچی کو میڈٰکل کیلئے اسپتال بھیجا ہے۔ پوکسو ایکٹ، دفعہ 376 اور دفعہ 511 کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے۔ ڈی ایس پی تیجیندر ورما نے معاملے کی تصدیق کی ہے اور کہا کہ معاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔

(آنی سے جتیندر گپتا کی رپورٹ)
First published: May 21, 2019 01:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading