உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lakhimpur Kheri case: سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کی ضمانت رد کی، ایک ہفتہ میں خودسپردگی کیلئے کہا

    Lakhimpur Kheri case: سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کی ضمانت رد کی، ایک ہفتہ میں خودسپردگی کیلئے کہا  (File Photo)

    Lakhimpur Kheri case: سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کی ضمانت رد کی، ایک ہفتہ میں خودسپردگی کیلئے کہا (File Photo)

    Lakhimpur Kheri Violence Case : سپریم کورٹ نے مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کے بیٹے اور لکھیم پور کھیری تشدد کے مرکزی ملزم آشیش مشرا کی ضمانت رد کر دی ہے۔ سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کو ایک ہفتے کے اندر خودسپردگی کا حکم دیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: سپریم کورٹ نے مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کے بیٹے اور لکھیم پور کھیری تشدد کے مرکزی ملزم آشیش مشرا کی ضمانت رد  کر دی ہے۔ سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کو ایک ہفتہ کے اندر خودسپردگی کا حکم دیا ہے۔ الہ آباد ہائی کورٹ نے 10 فروری کو آشیش مشرا کو ضمانت دی تھی اور وہ 18 فروری کو جیل سے باہر آئے تھے۔ سپریم کورٹ نے اس معاملہ کو از سر نو سماعت کے لیے الہ آباد ہائی کورٹ کو بھیج دیا ہے۔ چیف جسٹس این وی رمنا، جسٹس سوریہ کانت اور جسٹس ہیما کوہلی کی بنچ نے پیر کو یہ فیصلہ سنایا۔

       

      یہ بھی پڑھئے : China میں کورونا کا قہر، شنگھائی میں لاک ڈاون کے بعد پہلی موت، ایک دن میں تین لوگوں نے توڑا دم


      سپریم کورٹ نے تسلیم کیا کہ آشیش مشرا کو ضمانت دیتے ہوئے الہ آباد ہائی کورٹ نے متاثرہ فریق کو ٹھیک سے نہیں سنا اور ان کے دلائل کو نظر انداز کر دیا۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ الہ آباد ہائی کورٹ نے صرف ایک ایف آئی آر (جس میں کہا گیا تھا کہ لکھیم پور کھیری تشدد میں گولی لگنے سے کسی کی موت نہیں ہوئی) کی بنیاد پر آشیش مشرا کو ضمانت دی تھی ، جو غلط ہے، اس لیے ہائی کورٹ کو آشیش مشرا کی ضمانت درخواست پر دوبارہ تفصیل سے سماعت کرنی ہوگی ۔ نیز سپریم کورٹ نے زبانی تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ الہ آباد ہائی کورٹ کے جج، جنہوں نے پہلے آشیش مشرا کی درخواست ضمانت کی سماعت کی تھی، اس معاملہ کی وہ دوبارہ سماعت نہیں کریں گے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے :  روپ نگر میں ریلوے ٹریک پر آئے آوارہ جانور، مال گاڑی کے 16 ڈبے پٹری سے اترے، رد کرنی پڑی 8 ٹرینیں


      کسانوں کی طرف سے آشیش مشرا کی ضمانت کی مخالفت کی گئی تھی اور الہ آباد ہائی کورٹ کے فیصلہ کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ سپریم کورٹ نے کسانوں کی عرضی پر سماعت مکمل ہونے کے بعد 4 اپریل کو اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا تھا۔ تب سپریم کورٹ نے آشیش مشرا کی ضمانت کی درخواست کو منظور کرنے کے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر سوال اٹھایا تھا اور کہا تھا کہ جب معاملہ کی سماعت ابھی شروع ہونی باقی ہے تو پوسٹ مارٹم اور چوٹوں کی نوعیت جیسی غیر ضروری باتوں پر غور نہیں کیا جانا چاہئے ۔

      خصوصی بنچ نے اس حقیقت کا سخت نوٹس لیا تھا کہ ریاستی حکومت نے عدالت کی طرف سے مقرر کردہ خصوصی تفتیشی ٹیم کی تجویز کے مطابق ہائی کورٹ کے حکم کے خلاف درخواست دائر نہیں کی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: