ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

آپ کی مردانگی پر فیصلہ سنانے والے وہ کون ہوتے ہیں؟

کیا یہ فنٹاسی آپ کو ایک کمتر مرد بناتا ہے؟ بالکل نہیں۔ آپ کی جنسی پسند کیا ہے اور آپ کی شخصیت کیا ہے اس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔ بستر میں آپ کی شخصیت کیا ہے وہ باہر آپ کی شخصیت کیا ہوتی ہے اس سے الگ ہے۔

  • Share this:
آپ کی مردانگی پر فیصلہ سنانے والے وہ کون ہوتے ہیں؟
علامتی تصویر

سوال 20۔ میں بنگلہ دیش کا رہنے والا ہوں اور آپ کو اپنے دل کی ایک فنٹاسی (fantasy) کے بارے میں بتانا چاہتا ہوں اور یہ جاننا چاہتا ہوں کہ یہ معمول کی بات ہے یا غیر معمول کی بات۔ اپنے ایک گرل فرینڈ کے ساتھ 2-3 سال تک میرا غیر ازدواجی تعلق تھا۔ یہ ایک اوپن ریلیشن شپ تھا اور اس کو میری طرف سے یہ اجازت تھی کہ وہ اپنی مرضی سے کسی کے ساتھ بھی جسمانی تعلق بنا سکتی تھی جبکہ میرا اس کے علاوہ کسی اور سے کوئی تعلق نہیں تھا۔ مجھے اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا تھا کیونکہ اس کے بارے میں غیر محفوظ ہونے کا احساس مجھ میں نہیں تھا اور میں اسے باندھ کر نہیں رکھنا چاہتا تھا۔ وہ ایماندار تھی اور وہ اپنے سبھی عمومی جنسی تعلقات کے بارے میں مجھے بتاتی تھی۔ کچھ وقت کے بعد ہم اس فنٹاسی کو آگے لے گئے اور ہم نے ایس پی ایچ ( چھوٹے عضو کے سبب توہین برداشت کرنا) کے ساتھ تجربہ کرنا شروع کر دیا۔ وہ میرے عضو کے چھوٹے ہونے کو لے کر میری توہین کرتی تھی اور بتاتی تھی کہ کیسے اسے بڑا عضو پسند ہے۔ مجھے بھی یہ اچھا لگنے لگا۔ ہم بار بار اسے آزمانے لگے۔ پھر ہمارا بریک اپ ہو گیا اور ہم الگ ہو گئے۔ وہ پڑھائی کے لئے کسی اور ملک چلی گئی۔ لیکن اس کے ایس پی ایچ کو اب میں یاد کرتا ہوں اور میں اس بات کے لئے بےچین ہوں کہ کوئی میرے ساتھ ویسا ہی کرے۔ کوئی دیگر خاتون جس سے میں ملا ہوں، ایسے کھلے دل کی نہیں ہے جس کے ساتھ میں اپنی فنٹاسی ساجھا کر سکوں کیونکہ وہ مجھے کمتر مرد سمجھے گی۔

 فنٹاسی پوری طرح سے آپ کے اور آپ کے پارٹنر کے اپنے جنسی پسند پر منحصر کرتا ہے۔ ہو سکتا ہے کہ جس کو میں عجیب وغریب سمجھوں وہ کسی کے دل میں جوش پیدا کر دے۔ تو اس طرح کوئی ایسی فنٹاسی نہیں ہے جو دنیا میں سب کے لئے ایک طرح سے عجیب وغریب ہو بلکہ وہ الگ ہوتے ہیں۔ یہ جنسی سرگرمیوں میں شامل ہونے والے پارٹنروں پر ہے کہ وہ ایسے فنٹاسی میں خود کو ڈبا دیں جو ایک دوسرے کو پرجوش کرنے والا ہے۔ اگر ایس پی ایچ کی فنٹاسی آپ کو پرجوش کرتی ہے تو آپ ایسے پارٹنر کی تلاش کیجئے جسے بھی یہ پسند ہو۔


کیا یہ فنٹاسی آپ کو ایک کمتر مرد بناتا ہے؟ بالکل نہیں۔ آپ کی جنسی پسند کیا ہے اور آپ کی شخصیت کیا ہے اس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔ بستر میں آپ کی شخصیت کیا ہے وہ باہر آپ کی شخصیت کیا ہوتی ہے اس سے الگ ہے۔ اسے دوسرے طریقے سے سمجھئے۔ جب آپ اپنے باس کے ساتھ کام سے متعلق کسی رسمی میٹنگ میں ہوتے ہیں تو اس وقت آپ کی شخصیت کچھ اور ہوتی ہے۔ یہ آپ کی کام کے جگہ کی شخصیت ہوتی ہے۔ پھر جب آپ اپنے دوستوں کے ساتھ پارٹی کر رہے ہوتے ہیں تو اس وقت آپ کی شخصیت کچھ اور ہوتی ہے۔ غیر رسمی ' لطف اٹھانے والی شخصیت'۔ کیا آپ کے کام کی جگہ کی شخصیت اور پارٹی میں مزے کرنے والی شخصیت دونوں ایک ہی ہے؟ آپ اپنے دفتر کے کام میں جس طرح سے پیش آتے ہیں کیا وہ شخصیت اس وقت آڑے آتی ہے جب اپنے دوستوں کے ساتھ مزے کر رہے ہوتے ہیں؟ اگر آپ دفتر میں ایک سنجیدہ اور نرم دل شخص ہیں تو کیا خود ہی آپ کسی پارٹی میں ایک سنجیدہ اور نرم دل شخص بن جاتے ہیں؟


جب ہم چھوٹے عضو کے سبب توہین جیسی فنٹاسی کی بات کرتے ہیں تو یہ دھیان رکھنا ضروری ہے کہ سائز کا کوئی مطلب نہیں ہے اور اس فنٹاسی کا عضو کے حقیقی سائز سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ ہر سائز کے عضو والے شخص ایس پی ایچ کا لطف اٹھاتے ہیں۔ یہ فنٹاسی بھی کسی دیگر فنٹاسی کی طرح ہی تصورات کی اڑان اور مصالحے دار بات چیت پر ٹکا ہوتا ہے۔ جو لوگ اس میں شامل ہوتے ہیں ان کے دماغ میں یہ پیدا کیا جاتا ہے اور سچائی سے اس کا کوئی لینا دینا نہیں ہوتا ہے۔ تو اگر کوئی شخص ایس پی ایچ کا لطف اٹھاتا ہے اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ اس کے عضو کا سائز چھوٹا ہے ( عضو کا چھوٹا ہونا کوئی بری بات نہیں ہے)۔ مثال کے لئے اپنے پارٹنر کو سیکس کے دوران 'ڈیڈی'بلانے کا مطلب یہ نہیں ہے کہ حقیقی طور پر وہ آپ کا باپ ہوتا ہے۔ ایس پی ایچ بھی اسی طرح کام کرتا ہے۔ سیکس کے بارے میں بھی دیگر باتوں کی طرح یہاں تک کہ ایس پی ایچ میں بھی سائز کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔


سیکس کے دوران آپ کو کیا پسند ہے اس کی بنیاد پر یہ نتیجہ اخذ کرنا کہ آپ 'کمتر مرد' ہیں، ویسا ہی ہے جیسے یہ کہنا کہ چونکہ آپ کو بریانی پسند ہے اس لئے آپ کمتر مرد ہیں۔ سیکس کے بارے میں آپ کی پسند اور ایک شخص کے طور پر آپ کون ہیں، آپ کا وجود کیا ہے، آپ کے عضو کی سائز کیا ہے یا آپ مرد کی طرح ہیں یا نہیں اس کے بیچ میں کوئی تعلق نہیں ہے۔ کچھ لوگوں کو اڈلی پسند ہے، کچھ کو اپما، کچھ کو فوٹ جاب پسند ہے تو کچھ کو چھوٹے عضو کی بنیاد پر توہین۔ ان سب کا تعلق ذائقہ اور پسند سے ہے۔ اس میں کسی بھی طرح کا معنیٰ تلاش کرنا یا ان کا تجزیہ کرنا بیکار ہے۔

آپ اتنے ہی زیادہ مرد ہیں جتنا آپ ہونا چاہتے ہیں۔ آپ کی مردانگی کا ناپ تول کرنے کا حق آپ کو چھوڑ کر کسی اور کو نہیں ہے۔ اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ مرد ہیں تو آپ ہیں۔ بس، یہ اتنا ہی ہے۔ مردانگی کا دیگر سبھی 'معیار' نقلی ہے۔ بے بنیاد من گھڑت باتیں ہیں۔ اس لئے اگر کوئی اتنا کم ظرف شخص ہے کہ آپ کو جو چاپئے اس کی بنیاد پر وہ آپ کو کمتر مرد سمجھتا ہے تو یہ اس کی غلطی ہے اور آپ کو ایسے لوگوں سے کوئی مطلب نہیں ہونا چاہئے۔ آپ کی مردانگی پر فیصلہ سنانے والے وہ کون ہوتے ہیں؟ آپ اپنی کھوج جاری رکھئے۔ اس کے لئے آپ کو کسی سے بھی بھیک مانگنے یا گڑگڑانے کی ضرورت نہیں ہے۔ دنیا میں 7.5 ارب لوگ ہیں۔ آپ کو ایسے کئی لوگ مل جائیں گے جن کی فنٹاسی آپ کی طرح ہو گی۔

 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 14, 2020 11:04 PM IST