ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی میں لاک ڈاون کی مدت میں توسیع ، مزید ہوگی سختی ، میٹرو بند ، صرف گھر یا کورٹ میں کرسکیں گے شادی

وزیر اعلی نے کہا کہ اس بار کے لاک ڈاؤن کے دوران میٹرو خدمات معطل رہیں گی ، لیکن لازمی خدمات جاری رہیں گی ۔ ساتھ ہی ساتھ اس لاک ڈاون کے دوران عوامی مقامات پر شادی پر پوری طرح سے پابند رہے گی ۔ اگر کسی کو شادی کرنی ہے تو وہ گھر میں یا پھر کورٹ میں کرسکتا ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: May 09, 2021 04:41 PM IST
  • Share this:
دہلی میں لاک ڈاون کی مدت میں توسیع ، مزید ہوگی سختی ، میٹرو بند ، صرف گھر یا کورٹ میں کرسکیں گے شادی
دہلی میں لاک ڈاون کی مدت میں توسیع ، مزید ہوگی سختی ، میٹرو بند ، صرف گھر یا کورٹ میں کرسکیں گے شادی

نئی دہلی : دہلی حکومت نے دارالحکومت میں لاک ڈاؤن کی معیاد میں 17 مئی تک توسیع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اتوار کے روزیہ اعلان کیا ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے گزشتہ دنوں میں تاجروں ، خواتین ، نوجوانوں اور دیگرافراد سے بات چیت کی ہے سبھی کا خیال ہے کہ انفیکشن کے کیسز میں کمی آئی ہے ، لیکن وہ اس سطح پر نہیں ہیں کہ لاک ڈاؤن ہٹایا جا سکے ، بصورت دیگر ہم نے جوپایا ہیں اسے کھو دیں گے ۔ لہذا لاک ڈاؤن میں مزید ایک ہفتے کی توسیع کی جارہی ہے۔ اس مرتبہ یہ قدرے سخت ہو گا۔


وزیر اعلی نے کہا کہ اس بار کے لاک ڈاؤن کے دوران میٹرو خدمات معطل رہیں گی ، لیکن لازمی خدمات جاری رہیں گی اور ہنگامی طبی اہلکاروں کو نہیں روکا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ دہلی کے عوام نے اس بند کی حمایت کی ہے۔ ہم نے آکسیجن بیڈ بڑھانے کے لئے اس لاک ڈاؤن کی مدت کا استمعال کیا ۔


وزیر اعلی نے کہا کہ فی الحال آکسیجن کی دستیابی سب سے بڑا مسئلہ ہے اور معمول سے کئی گنا زیادہ اس کی ضرورت ہے ، حالانکہ اب دہلی میں صورتحال بہتر ہورہی ہے اور ہمیں پہلے کی طرح ایس او ایس کالز نہیں مل رہی ہیں ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ گزشتہ 26 اپریل کوایکٹو کیسز کی شرح 35 فیصد تھی اورگذشتہ دو دن سے اس میں گراوٹ آئی ہے اور اب یہ 23 فیصد پر آگئی ہے۔


اس لاک ڈاون کے دوران عوامی مقامات پر شادی پر پوری طرح سے پابند رہے گی ۔ اگر کسی کو شادی کرنی ہے تو وہ گھر میں یا پھر کورٹ میں کرسکتا ہے ۔ حالانکہ اس دوران 20 لوگوں سے زیادہ کی شرکت نہیں ہوسکتی ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ شادی میں ٹینٹ ، ڈی جے اور کیٹرنگ کی اجازت نہیں ہوگی ۔ اگر کسی نے ان چیزوں کیلئے ایڈوانس دیدیا ہے تو انہیں پیسے لوٹانے ہوں گے یا پھر آپسی رضامندی سے آگے کی کوئی تاریخ طے کرنی ہوگی ۔

پھر ایک دن میں چار لاکھ سے زیادہ نئے کیسز

ادھر ملک میں ایک دن میں ریکارڈ پونے چار لاکھ سے زائد لوگوں نے کورونا کو شکست دی ، جس کی وجہ سے ایکٹو کیسز میں کمی واقع ہوئی ہے ۔ تاہم چار لاکھ سے زیادہ نئے کیسز بھی سامنے آئے ہیں ۔ وہیں دوسرے دن چار ہزار سے زائد مریضوں کی اس وبا سے مو ت ہوئی ہے ۔ اس دوران ہفتہ کے روز 20 لاکھ 23 ہزار 532 افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے گئے۔ ملک میں اب تک 16 کروڑ 94 لاکھ 39 ہزار 663 افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے جا چکے ہیں۔

مرکزی وزارت صحت کی جانب سے اتوار کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران تین لاکھ 86 ہزار 444 مریض صحتیاب ہوئے ہیں ، جس سے اب تک کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد ایک کروڑ 83 لاکھ 17 ہزار 404 ہو گئی ہے ۔ اس دوران 4،03،738 نئے کیسز سامنے آنے سے متاثرہ افراد کی تعداد دو کروڑ 22 لاکھ 96 ہزار 414 ہوگئی ہے۔

ایکٹو کیسز کچھ دنوں کے مقابلے میں کم بڑھے ہیں اور ان کی تعداد بڑھ کر 37 لاکھ 36 ہزار 648 ہوگئی ہے۔ اس دوران 4092 مریضوں کی موت ہونے سے اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد 2،42،362 ہوگئی ہے۔ ملک میں شفایابی کی شرح بڑھ کر 82.15 فیصد اورایکٹو کیسز کی شرح کم ہو کر 16.76 فیصد ہو گئی ہے ۔ جبکہ شرح اموات اب بھی 1.09 فیصد ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 09, 2021 04:41 PM IST