ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایک بااختیار قوم کی بنیاد آپ کے ووٹ پر قائم ہے

اپنا ووٹ ڈالنا اور کسی ایسی حکومت کو اقتدار میں لانا جو ملک کی بہتری اور اس کے شہریوں کی زندگی کی ترقی کے لیے کام کرے، ہر بالغ ہندوستانی شہری کا حق اور فریضہ ہے۔

  • Share this:
ایک بااختیار قوم کی بنیاد آپ کے ووٹ پر قائم ہے
نیٹ ورک 18 کی مہم، ’’بٹن دباؤ، دیش بناؤ‘‘۔

ہندوستان میں عام انتخابات2019 جاری ہیں۔ سات مرحلوں کی پولنگ کا چھٹا مرحلہ 12 مئی 2019 کو اختتام پذیر ہو گیا اور ساتویں اور آخری مرحلے کے لئے کل ووٹ ڈالے جائیں گے۔


ہم ہندوستانی شہری اور ووٹرز انتخابی موسم میں ایک بڑا کردار ادا کرتے ہیں۔ ہرایک شہری کا ہر ایک ووٹ قوم کی تقدیر لکھنے کا کام کرتا ہے۔ ہندوستان کا مستقبل برسراقتدار سیاسی جماعت یا حکومت کے کندھوں پر نہیں بلکہ اس کے ووٹرز کے کندھوں پر ہے۔


اپنا ووٹ ڈالنا اور کسی ایسی حکومت کو اقتدار میں لانا جو ملک کی بہتری اور اس کے شہریوں کی زندگی کی ترقی کے لیے کام کرے، ہر بالغ ہندوستانی شہری کا حق اور فریضہ ہے۔


نیوز18 انڈیا کے امیش دیوگن ہر تنہا ووٹ کی اہمیت پر گفتگو کرتے ہیں۔ وہ زندگی کے تمام شعبوں کی نمایاں عوامی شخصیات کے ایک ممتاز پینل کے ساتھ،جیسے کہ سونل مان سنگھ، سنیل آروڑا، دلیپ چیریان، ادویتا کالرا اور شیوانی وزیر پشریچا،  عوام سے ملک کو آگے لے جانے میں ان کے تنہا ووٹ کی اہمیت سمجھنے پر زور دیتے ہیں۔


آپ کے اکیلے ووٹ کی اہمیت ایک تجزیہ


ہر ہندوستانی شہری کا ووٹ ملک کے مستقبل پر اثرانداز ہوتا ہے۔ ہر ووٹرکے لیے اپنا ووٹ ڈالنا ضروری اور لازمی ہے۔




  • ہر ووٹ ڈالنا بچوں کو تعلیم فراہم کرنے میں مددگار ہوتا ہے۔ یہ ایسے 4% بچوں کو بنیادی تعلیم دلاتا ہے جنہیں اصل دھارے کی تعلیم تک رسائی نہیں ہے


  • خط افلاس سے نیچے زندگی گزارنے والے تقریبا50 ملین لوگوں کی زندگیوں کو فائدہ پہنچے گا۔


  • آپ کا ہر ووٹ بیماروں اور مریضوں کے لیے بہتر طبی دیکھ بھال کا راستہ ہموار کرے گا۔


  • پانی، بجلی اور دیگر بنیادی ڈھانچے جیسے کہ سڑکیں، گھر وغیرہ بہتر ہوسکتے ہیں۔


  • آپ کے اکیلے ووٹ میں تمام انتخابات کی کایا پلٹنے اور ان کا رخ بدلنے کی طاقت ہے۔


ہندوستان جیسی جمہوریت میں ووٹر مضبوط ترین رابطہ ہے۔


نئے اور پہلی بارووٹ ڈالنے والوں کے لیے مشورہ


نئے اور پہلی بار ووٹ ڈالنے والے اپنے ووٹ کی شکل میں زبردست طاقت کا استعمال کرتے ہیں۔ ان کا ووٹ ان کی آواز ہے۔ انہیں اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ یہ آواز سنی جاتی ہے۔


ان سےدرخواست ہےکہ ووٹ کی تاریخ سے کافی پہلے آن لائن جا کر دیکھ لیں کہ آیا ان کانام ووٹرزکی لسٹ میں ہے یا نہیں، اس سے وہ آخری لمحہ کےتذبذب سےبچےرہیں گے۔اپنے آبائی وطن سے دور اور کام یا پڑھائی کی وجوہات کے باعث ملک کے مختلف حصوں میں آباد ہوجانے والے ووٹرزکواپنا ایڈریس منتقل کرنے اوراپنےموجودہ رہائشی مقام پرووٹ ڈالنے کا طریقۂ کار تلاش کرنا چاہیے۔


انھیں اس انتخاب میں پرزورطریقہ سے حصہ لینےاورذمہ دار شہری کے طورپرووٹ ڈالنے کی تاکید کی جاتی ہے۔


اگرآپ کسی سیاست داں یاسیاسی جماعت کو پسند نہیں کرتے توکیا کریں۔


انتخابات میں کھڑے ہونے والے امیدواروں اور سیاسی جماعتوں سے ووٹر بہت سی مرتبہ مایوس ہوتا ہے۔ سونل مان سنگھ کا کہنا ہے کہ اس صورت میں سب سے بہتر مشورہ یہ ہے کہ ایسے امیدوار اور پارٹی کے لئے ووٹ ڈالیں جو آپ کوتحریک دیتے ہوں اور آپ کو بہتر حکومت کی امید دلاتے ہوں۔


متبادل طور پر، آپ اس شخص کو بھی تلاش کرسکتے ہیں جس کے اندر ملک کے لیے کچھ کرنے کی تحریک ہو اور وہ ایک مخلص محب وطن ہو۔ اس طرح کے امیدوار کے لئے ووٹ ڈالیں۔


انتخابی عمل کو عبادت کے طور پر کریں اور اپنا ووٹ ڈالنے کے لیے مکمل شوق کا مظاہرہ کریں۔


ووٹرز کے لئے پیغام


آپ کی لاپرواہی کی قیمت ایک لاپرواہ حکومت ہوگی۔ ادویتا کالرا عوام سے زور دے کر کہتی ہیں کہ وہ ایک مستحکم، مضبوط اور اہل حکومت کے لئے ووٹ ڈالیں جو5 سال کی مکمل مدت تک کامیابی سے جاری رہنے کی اہل ہو۔ وہ لوگوں کو یہ بات یاد رکھنے کے لیے ہوشیار کرتی ہیں کہ ووٹنگ ایک مہنگاعمل ہےاوراس میں ملک کا خزانہ لگتا ہے۔


پورے چھ مرحلوں میں مرحلہ  1میں سب سے زیادہ ووٹروں نے ووٹ ڈالے۔ اس مرحلہ میں ووٹ ڈالنے والوں کا فیصد 69.50٪ تھا۔ مرحلہ 2 میں یہ69.44٪ تھا،مرحلہ 3 میں 68.40٪ اور مرحلہ 4 میں 65.51٪۔ مرحلہ 5 اور مرحلہ 6 میں بالترتیب تقریبا 65٪ اور63.48٪تھا۔


بٹن دباؤ، دیش بناؤ نیٹ ورک 18کی ایک پہل ہے جو آر پی-سنجیو گوینکا گروپ کے ذریعہ پیش کی گئی ہے۔  یہ پہل ہر ہندوستانی کو جاری عام انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کرتی ہے۔  سوشل میڈیا پر ہیش ٹیگ


#ButtonDabaoDeshBanao


کا استعمال کرکے بحث میں شامل ہوں۔

First published: May 18, 2019 01:33 PM IST
  • India
  • World

India

  • Active Cases

    6,039

     
  • Total Confirmed

    6,761

     
  • Cured/Discharged

    515

     
  • Total DEATHS

    206

     
Data Source: Ministry of Health and Family Welfare, India
Hospitals & Testing centres

World

  • Active Cases

    1,201,522

     
  • Total Confirmed

    1,674,854

    +71,202
  • Cured/Discharged

    371,858

     
  • Total DEATHS

    101,474

    +5,782
Data Source: Johns Hopkins University, U.S. (www.jhu.edu)
Hospitals & Testing centres