உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جیٹلی کے استعفی کے مطالبہ پر زبردست ہنگامہ، ایوان کی کارروائی تین بار ملتوی

    نئی دہلی۔  کانگریس کے اراکین  وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر دہلی اور ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں گھوٹالہ کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے ان کے استعفی کی مانگ کو لے کر آج راجیہ سبھا میں زبردست شوروغل اور ہنگامہ کیا جس کی وجہ سے وقفہ سوال میں رخنہ اور اس دوران ایوان کی کارروائی تین بار ملتوی کرنی پڑی۔

    نئی دہلی۔ کانگریس کے اراکین وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر دہلی اور ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں گھوٹالہ کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے ان کے استعفی کی مانگ کو لے کر آج راجیہ سبھا میں زبردست شوروغل اور ہنگامہ کیا جس کی وجہ سے وقفہ سوال میں رخنہ اور اس دوران ایوان کی کارروائی تین بار ملتوی کرنی پڑی۔

    نئی دہلی۔ کانگریس کے اراکین وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر دہلی اور ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں گھوٹالہ کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے ان کے استعفی کی مانگ کو لے کر آج راجیہ سبھا میں زبردست شوروغل اور ہنگامہ کیا جس کی وجہ سے وقفہ سوال میں رخنہ اور اس دوران ایوان کی کارروائی تین بار ملتوی کرنی پڑی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  کانگریس کے اراکین  وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر دہلی اور ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں گھوٹالہ کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے ان کے استعفی کی مانگ کو لے کر آج راجیہ سبھا میں زبردست شوروغل اور ہنگامہ کیا جس کی وجہ سے وقفہ سوال میں رخنہ اور اس دوران ایوان کی کارروائی تین بار ملتوی کرنی پڑی۔ صبح 11 بجے راجیہ سبھا کے ڈپٹی چیئرمین پی جے کورین نے ایوان میں ضروری دستاویزات رکھے جانے کے بعد جیسے ہی وقفہ صفر شروع کیا تبھی کانگریس اراکین نے کہا کہ وزیر خزانہ کے خلاف ضابطہ 267 کے تحت نوٹس دیا ہوا ہے جس میں بدعنوانی کا الزام ہے۔ پہلے اس پر بحث ہونی چاہئے۔ ایوان میں اپوزیشن کے رہنما غلام نبی آزاد نے کہا کہ ملک میں کئی دنوں سے ڈي ڈي سی اے میں بدعنوانی کے الزامات کے مسئلہ پر بحث ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں 150 کروڑ روپے کے گھوٹالے کا الزام ہے جس میں 14 فرضی کمپنیاں شامل ہیں۔


      اس کے جواب میں ارون جیٹلی نے کہا کہ وہ قانونی ریکارڈ رکھ رہے ہیں اور اراکین اس پر بحث کرنا چاہتے ہیں تو وہ جواب دینے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے اراکین نوٹس دیے بغیر بھی کوئی الزام لگاتے ہیں تو وہ فوراً اس کا جواب دیں گے. کانگریس ارکان کی نعرے بازی کا سلسلہ جاری رہنے پر وزیر خزانہ نے کہا کہ وہ صرف نعرے بازی کرنا چاہتے ہیں کچھ کہنا نہیں چاہتے ہیں۔ مسٹر کورین نے کہا کہ صدر نشیں کسی بحث کے خلاف نہیں ہے۔ وزیر پر الزام لگانے کا ایک ضابطہ ہوتا ہے اور اسی کے تحت بحث کی جا سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ الزام لگانے کے لئے پہلے اجازت لینی ہوتی ہے اور اس کے لئے متعلقہ وزیر کو بھی اطلاع دینی ہوتی ہے۔انہوں نے  کانگریس اراکین کو اس پر بحث کے لئے نوٹس دینے کو کہا۔

      First published: