ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رام مندر پر سپریم کورٹ کو 24 گھنٹے میں فیصلہ سنا دینا چاہئے: وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ

وزیر اعلی یوگی نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ رام جنم بھومی عقیدت سے جڑا ہوا موضوع ہے اور عدالت کو بھی لوگوں کے عقیدے کا احترام کرتے ہوئے 24 گھنٹے کے اندر اس پر فیصلہ سنا دینا چاہئے

  • Share this:
رام مندر پر سپریم کورٹ کو 24 گھنٹے میں فیصلہ سنا دینا چاہئے: وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ
اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ : فائل فوٹو۔

اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے رام جنم بھومی ۔ بابری مسجد معاملہ پر کہا ہے کہ سپریم کورٹ کو اس پر 24 گھنٹے کے اندر فیصلہ دے دینا چاہئے۔ وزیر اعلی یوگی نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ رام جنم بھومی عقیدت سے جڑا ہوا موضوع ہے اور عدالت کو بھی لوگوں کے عقیدے کا  احترام کرتے ہوئے 24 گھنٹے کے اندر اس پر فیصلہ سنا دینا چاہئے۔

یوگی نے لکھا ہے کہ ،  ’’رام جنم بھومی ایک عقیدت سے جڑا ہوا موضوع ہے اور عدالت کو بھی لوگوں کے عقیدے کا احترام کرتے ہوئے 24 گھنٹے کےاندر اس پر اپنا فیصلہ سنا دینا چاہئے۔ جہاں تک زمین کی تقسیم کا سوال ہے تو الہ آباد ہائی کورٹ پہلے ہی کہہ چکی ہے کہ جہاں رام جی براجمان ہیں، وہیں رام جنم بھومی ہے‘‘۔

اس کے فورا بعد وزیر اعلی نے ایک ٹویٹ کیا جس میں لکھا تھا، ’’ اس کے بعد زمین تقسیم کا تنازعہ ہی ختم ہو جاتا ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ 24 گھنٹے کے اندر اس پر فیصلہ آجانا چاہئے، 25واں گھنٹہ لگنا ہی نہیں چاہئے‘‘۔


قابل غور ہے کہ اس سے قبل بھی وزیر اعلیٰ یوگی نے ایک تقریب کے دوران کہا تھا کہ اگر عدالت رام مندر تنازعہ ان کے حوالے کر دے تو وہ 24 گھنٹے کے اندر اس کا حل نکال دیں گے۔


First published: Feb 12, 2019 09:43 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading