ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بی ایس پی کے سابق جنرل سکریٹری نسیم الدین صدیقی اور رام اچل راجبھر گرفتار، بھیجے گئے جیل

دونوں رہنماوں نے خودسپردگی کے ساتھ عبوری ضمانت کی عرضی بھی داخل کی تھی۔ کورٹ نے سماعت کے بعد عبوری ضمانت کی عرضی مسترد کرتے ہوئے دونوں کو جیل بھیج دیا۔

  • Share this:
بی ایس پی کے سابق جنرل سکریٹری نسیم الدین صدیقی اور رام اچل راجبھر گرفتار، بھیجے گئے جیل
بی ایس پی کے سابق جنرل سکریٹری نسیم الدین صدیقی اور رام اچل راجبھر گرفتار: فائل فوٹو

لکھنئو۔ بی جے پی رہنما دیا شنکر سنگھ کے کنبے کی خواتین اور ان کی بیٹی پر بیہودہ تبصرہ کرنے کے معاملے میں منگل کو بی ایس پی کے سابق جنرل سکریٹری نسیم الدین صدیقی (Nasimuddin Siddiqui) اور رام اچل راجبھر (Ram Achal Rajbhar) کو گرفتار کر کے جیل بھیج دیا گیا۔ دونوں رہنماوں نے ایم پی۔ ایم ایل اے کورٹ (MP-MLA Court) میں خودسپردگی کر دی جہاں کورٹ نے دونوں رہنماوں کو جیل بھیج دیا۔ دونوں رہنماوں نے خودسپردگی کے ساتھ عبوری ضمانت کی عرضی بھی داخل کی تھی۔ کورٹ نے سماعت کے بعد عبوری ضمانت کی عرضی مسترد کرتے ہوئے دونوں کو جیل بھیج دیا۔ اس سے پہلے دونوں رہنماوں کو کورٹ نے مفرور قرار دیتے ہوئے ان کی املاک کو قرق کرنے کا حکم دیا تھا۔ کورٹ نے اس معاملے میں انسپکٹر حضرت گنج کو 20 فروری تک قرقی کی رپورٹ بھی پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔


الزام ہے کہ سنہ 2016 میں دونوں رہنماؤں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما دیا شنکر سنگھ کے کنبے کی خواتین کے خلاف عوامی طور پر گالی گلوچ کی تھی۔ واضح ر ہے کہ بی جے پی لیڈر دیا شنکر سنگھ کی والدہ ، تیتری دیوی نے حضرت گنج کوتوالی میں شکایت درج کروائی تھی ، جس میں کہا گیا تھا کہ حضرت گنج میں واقع امبیڈکر مجسمے کے سامنے منعقدہ ایک پروگرام میں بی ایس پی قائدین نے ان کی اور اس کی بیٹی کے خلاف غیر مہذب زبان کا استعمال کیا تھا۔ بھیڑ کو تشدد کے لئے اکسایا تھا۔


اس معاملے میں نسیم الدین صدیقی اور راج بھر کے علاوہ میولال گوتم ، نوشاد علی اور اے ایس راؤ کو نامزد کیا گیا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف 12 جنوری 2018 کو عدالت میں چارج شیٹ دائر کی تھی۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jan 19, 2021 10:59 PM IST