உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوپی کے کانگریس صدر راج ببر نے دیا استعفیٰ،برہمن چہرے کی ہو سکتی ہے تاج پوشی

    سینئر کانگریس لیڈر اور یوپی کانگریس کمیٹی کے صدر راج ببر: فائل فوٹو۔

    سینئر کانگریس لیڈر اور یوپی کانگریس کمیٹی کے صدر راج ببر: فائل فوٹو۔

    ۔کانگریس کی یوپی یونٹ کے صدر راج ببر نے منگل کی شام کو اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔

    • Share this:
      لکھنؤ۔کانگریس کی یوپی یونٹ کے صدر راج ببر نے منگل کی شام کو اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔ذرائع کے مطابق 2019 لوک سبھاانتخابات سے پہلے راہل گاندھی کی نئی ٹیم کیلئے راج ببر نے یہ قدم اٹھایا ہے۔حالانکہ ان کا استعفی ابھی قبول نہیں کیا گیا ہے۔نئے صڈر کی تقرری تک اس عہدے کی ذمہ داری سنبھالتے رہیں گے۔

      ذرائع کے مطابق یو پی کانگریس کے اگلے سربراہ شاید برہمن ہو ں گے اور اسی دوڑ میں سابق مرکزی وزیر جتین پرساد سب سے آگے چل رہے ہیں۔جتین پرساد راہل گاندھی کے قریبی بھی مانے جاتے ہیں۔اس کے علاوہ سینئر کانگریس لیڈر پرمود تیواری اور وارنسی کے سابق ایم پی راجیش مشرا کا بھی نام چرچہ میں ہے۔کہا جا رہا ہیکہ صدر کے نام کا اعلان نوراتروں میں ہی کیا جا سکتا ہے۔
      دراصل راجببر نے لوک سبھا چناؤ میں اپنے لئے نئی ذمہ داری کی بات کہہ کر استعفیٰ کی پیشکش کی تھی۔راج بابر نے قومی سطح پراسٹارکیمپئنرس کے طور پر کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔اس کے علاوہ یہ بھی کہا جارہا ہیکہ 2019میں لوک سبھا چناؤ سے پہلے ایس پی کے ساتھ اتحاد طے ماناجا رہا ہے۔لہذاراج ببر ایس پی سے پرانی عدوتوں کی وجہ سے مفید نہیں تھے۔اس لئے بھی انہوں نے استعفی دیا ہے۔
      حالانکہ استعفیٰ کے بعد راجببر نے کہا کہ اسمبلی انتخابات کے دوران انہیں نئی ذمہ داری دیکر بھیجا گیا تھا۔انہوں نے اپنی کارکردی کو اچھے سے نبھایا۔انہوں نے کہا کہ 2019 کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کی اور دیگر لوگوں کا کردار بدلنا چاہئے۔کس کا کیا کردار ہوگا یہ لیڈر شپ کو طے کرنا ہوگا۔
      First published: