ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اس شہر کے ہوٹل میں لگزری سہولیات حاصل کر سکتے ہیں کوارنٹائن کیے گئے افراد 

محکمہ صحت کے ڈاکٹر سنیل شرما کے مطابق شہر کے دو بڑے ہوٹل مکُٹ محل اور بگ بائٹ میں 28 کمرے تیار کیے گئے ہیں۔

  • Share this:
اس شہر کے ہوٹل میں لگزری سہولیات حاصل کر سکتے ہیں کوارنٹائن کیے گئے افراد 
محکمہ صحت کے ڈاکٹر سنیل شرما کے مطابق شہر کے دو بڑے ہوٹل مکُٹ محل اور بگ بائٹ میں 28 کمرے تیار کیے گئے ہیں۔

میرٹھ میں کوروناوائرس کے مشتبہ مریضوں کے لیے قائم کیے گئے کوارنٹائن سینٹروں میں سہولیات اور انتظامات کو لیکر سوال اٹھتے رہے ہیں۔ ایسے میں ضلع انتظامیہ نے ایک نئی پہل کرتے ہوئے شہر کے دو ہوٹلوں کے کمروں میں کوارنٹائن سینٹر قائم کرنے کی کوشش کی ہے جہاں مریض کرایہ ادا کرکے سہولیات حاصل کر سکتا ہے۔

محکمہ صحت کے ڈاکٹر سنیل شرما کے مطابق شہر کے دو بڑے ہوٹل مکُٹ محل اور بگ بائٹ میں 28 کمرے تیار کیے گئے ہیں۔


سرکاری کوارنٹائن سینٹروں کی جگہ نجی طور پر ہوٹل میں کرائے کی ادائیگی کرکے علحدہ رہنے اور بہتر سہولیات چاہنے والے مریضوں کے لیے یہ انتظام کیا گیا ہی جہاں روز کا ایک سے تین ہزار روپیے کرایہ ادا کرکے کمرہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔ ناشتے اور کھانے کے لیے مریض کو الگ سے رقم ادا کرنی ہوگی۔ ایک وقت کے ناشتے کے لیے 150 روپیے اور ایک وقت کے کھانے کے لیے 250 سے 300 روپیے ادا کرنے  ہوں گے۔

اس سے پہلے شہر میں قائم کیے گئے مختلف کوارنٹائن سینٹروں میں بد انتظامی اور گندگی کی شکایتیں ملی تھیں۔ سرکاری کوارنٹائن سینٹروں میں داخل کیے گئے افراد نے یہاں بد انتظامی اور گندگی کی ویڈیو بھی وائرل کی تھی۔ کوارنٹائن سینٹروں پر اسٹاف کی لاپرواہی اور گندگی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد محکمہ صحت اور ضلع انتظامیہ کے اعلیٰ افسران بھی حرکت میں آ گئے تھے لیکن باوجود اس کے بہت سے افراد ان سینٹروں پر کو انتظامات اور سہولیات سے مطمئن نہیں تھے۔ ایسے میں ضلع انتظامیہ نے ایک نئی پہل کرتے ہوئے ذاتی خرچ پر بہتر سہولیات حاصل کرنے کے خواہشمند مریضوں کے لیے اسکی شروعات کی ہے۔

وہیں ہوٹل مالکان کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران ہوٹل صنعت بھی بری طرح متاثر ہوئی ہے ایسے میں بند ہوٹلوں کا اس طریقہ سے استعمال کرکے آمدنی کے ایک ذریعہ کی شروعاتی ہو سکتی ہے۔
Published by: sana Naeem
First published: May 12, 2020 07:20 PM IST