உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhya Pradesh: گیارہ دیہاتی گرفتار، 27 کے خلاف دلت مرد کی شادی کے جلوس کو روکنے کا الزام

    پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما (Rajesh Ahirwar) نے بتایا کہ ان لوگوں نے دولہا راجیش اہیروار کے رشتہ داروں کو میوزک سسٹم استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ سنیچر کی رات دیر گئے کچنریا گاؤں میں جلوس نکالنے سے روک دیا تھا۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما نے بتایا کہ شادی کے مقام پر توڑ پھوڑ کی تھی۔

    پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما (Rajesh Ahirwar) نے بتایا کہ ان لوگوں نے دولہا راجیش اہیروار کے رشتہ داروں کو میوزک سسٹم استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ سنیچر کی رات دیر گئے کچنریا گاؤں میں جلوس نکالنے سے روک دیا تھا۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما نے بتایا کہ شادی کے مقام پر توڑ پھوڑ کی تھی۔

    پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما (Rajesh Ahirwar) نے بتایا کہ ان لوگوں نے دولہا راجیش اہیروار کے رشتہ داروں کو میوزک سسٹم استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ سنیچر کی رات دیر گئے کچنریا گاؤں میں جلوس نکالنے سے روک دیا تھا۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما نے بتایا کہ شادی کے مقام پر توڑ پھوڑ کی تھی۔

    • Share this:
      ایک پولیس اہلکار نے اتوار کو بتایا کہ مدھیہ پردیش (Madhya Pradesh) کے راج گڑھ ضلع میں ایک دلت شخص کی شادی کے جلوس میں مبینہ طور پر رکاوٹ ڈالنے کے الزام میں گیارہ افراد کو گرفتار کیا گیا اور 27 دیگر کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔

      پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما (Rajesh Ahirwar) نے بتایا کہ ان لوگوں نے دولہا راجیش اہیروار کے رشتہ داروں کو میوزک سسٹم استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ سنیچر کی رات دیر گئے کچنریا گاؤں میں جلوس نکالنے سے روک دیا تھا۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پردیپ شرما نے بتایا کہ شادی کے مقام پر توڑ پھوڑ کی تھی اور وہاں موجود کچھ لوگوں پر حملہ کیا تھا۔

      ایس پی نے بتایا کہ کلیکٹر اور میں نے گاؤں کا دورہ کیا اور دولہا کے خاندان سے بات کی۔ ہم نے 38 لوگوں پر مقدمہ درج کیا جن میں سے 11 کو علاقے میں سرچ آپریشن کے بعد گرفتار کیا گیا ہے۔ شادی کا جلوس میں ساؤنڈ سسٹم شامل تھا۔ وہ اتوار کی صبح نکالا گیا،۔ انہوں نے کہا کہ تین ملزمان کے پاس بندوق کے لائسنس تھے اور انہیں منسوخ کرنے کا عمل شروع ہو چکا ہے۔

      ایس پی نے کہا کہ گاؤں میں امن و امان کو برقرار رکھنے کے لیے کئی پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ دولہے کے خاندان کو ہر طرح کی مدد اور حفاظت کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: