உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madras High Court: ایک ہزامگرمچھوں کو چینائی سے گجرات کیا جاسکے گا منتقل، مدراس ہائی کورٹ نے مفاد عامہ کی عرضی کوکیاخارج

    مفاد عامہ کی عرضی  کوخارج  کردیا۔

    مفاد عامہ کی عرضی کوخارج کردیا۔

    درخواست گزار نے ماہرین کی رائے کے خلاف کوئی ثبوت پیش نہیں کیا۔ ایم سی بی ٹی نے اس معاملے میں اپنا موقف پیش کرتے ہوئے عدالت کے سامنے تسلیم کیا کہ اس کے پاس چینائی کے قریب واقع مرکز میں مگرمچھوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کا خیال رکھنے کے لیے مالی وسائل نہیں ہیں۔

    • Share this:
      مدراس ہائی کورٹ (Madras High Court) نے بدھ کے روز مدراس کروکوڈائل بینک ٹرسٹ (MCBT) سے تقریباً ایک ہزارمگر مچھوں کو گجرات میں گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سینٹر (GZRRC) میں منتقلی کرنے کے خلاف دائر مفاد عامہ کی عرضی کوخارج کردیا۔

      مفاد عامہ کی عرضی کو مسترد کرتے ہوئے چیف جسٹس منشور ناتھ بھنڈاری اور جسٹس این مالا نے مشاہدہ کیا کہ جب ماہرین ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کی حمایت یافتہ گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سینٹر (GZRRC) میں دستیاب سہولیات سے مطمئن ہیں تو عدالت کو اس میں مداخلت نہیں کرنا چاہے گی۔

      درخواست گزار نے ماہرین کی رائے کے خلاف کوئی ثبوت پیش نہیں کیا۔ ایم سی بی ٹی نے اس معاملے میں اپنا موقف پیش کرتے ہوئے عدالت کے سامنے تسلیم کیا کہ اس کے پاس چینائی کے قریب واقع مرکز میں مگرمچھوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کا خیال رکھنے کے لیے مالی وسائل نہیں ہیں۔ جبکہ ذاتی معائنہ کے بعد گجرات میں واقعجی زیڈ آر آر سی میں دستیاب جدید ترین سہولیات کی تصدیق کر دی گئی ہے۔

      یہ بھی پڑھئے:


      گیٹ 2023 نوٹیفکیشن، 30 اگست سے آن لائن رجسٹریشن، 4 فروری سے امتحان

      گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سنٹر (جی زیڈ آر آر سی) نے کہا کہ ان کے پاس 1,000 مگرمچھوں کو رکھنے کے لیے کافی جگہ ہے۔ اس نے چڑیا گھر کی تصاویر جمع کرائیں اور دعویٰ کیا کہ ان کے احاطے میں 1000 مگرمچھ آسانی سے رہ سکتے ہیں۔ گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سنٹر کو ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کی حمایت حاصل ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      MANUU Admission: اردو یونیورسٹی میں فاصلاتی کورسز میں داخلے کیلئے اعلامیہ جاری

      ججوں نے درخواست گزار کو بغیر کسی اطلاع کے سی بی آئی انکوائری کرانے کے مطالبہ پر سرزنش کی۔ انہوں نے کہا کہ جانوروں کی فلاح و بہبود کی فکر کے پیش نظر ہم نے عرضی قبول کی تھی۔ لیکن اب یہ مقدمہ خارج کر دیا گیا ہے۔ چینائی کے اے وشواناتھن نے اس سال جون میں پی آئی ایل دائر کی تھی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: