உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: میجر چتریش کی آئندہ ہونے والی تھی شادی، آئی ای ڈی دھماکہ میں ہوگئے شہید

    میجرچتریش سنگھ بشٹ شہید ہوگئے۔

    میجرچتریش کے والد شادی کا کارڈ تقسیم کرنے گئے تھے اورانہیں شام میں بیٹےکے ایک دوست کے ذریعہ جانبازجوان کی شہادت کی اطلاع ملی۔

    • Share this:
      گزشتہ جمعرات کوپلوامہ میں ہوئے خطرناک دہشت گردانہ حملے میں سی آرپی ایف کے 40 جوانوں کی جان چلی گئی تھی۔ اس حادثہ میں شہید ہونے والے جوانوں کی آخری رسوم بھی ادا نہیں ہوسکی تھی کہ دہشت گردوں نے ایک اورحادثہ کوانجام دے دیا۔ پلوامہ حملے کے دو دن بعد یعنی ہفتہ کوای آئی ڈی بلاسٹ میں ہندوستانی فوج کے ایک میجرشہید ہوگئے۔ انہیں ای آئی ڈی بلاسٹ میں زبردست چوٹ آئی تھی۔ اس حادثے میں ایک جوان زخمی بھی ہوگیا ہے۔

      اگلے ماہ کی 7 تاریخ یعنی 7 مارچ کو میجرچتریش بشٹ کی شادی تھی۔ شہید میجرچتریش اتراکھنڈ کے دہرہ دون کے رہنے والے تھے۔ ان کے والد اتراکھنڈ پولیس میں انسپکٹرتھے۔ چتریش کے والد دوپہرمیں ان کی شادی کے کارڈ تقسیم کرنے گئے تھے۔ شام کو چترتھ کے دوست کا فون آنے پراہل خانہ کوان کی شہادت کی خبرملی تھی۔ چتریش تین فروری کو ہی چھٹی سے ڈیوٹی پرگئے تھے۔ اس سے قبل چتریش مئومیں ٹریننگ کرنے گئے تھے۔

      فوج کے انجینئرنگ کاپرس کے میجرچتریش سنگھ بشٹ ایک بم ڈسپوزل ٹیم کی قیادت کررہے تھے۔ ان کی ٹیم نےراجوری کے نوشیرا سیکٹرمیں روڈ کنارے کئی مائنس (کان) تلاش کر لئے۔ اتراکھنڈ کی راجدھانی دہرہ دون کے رہنے والے میجرچتریش اوران کی ٹیم نےایک مائن کوڈیفیوزکرلیا تھا۔ تاہم جیسے ہی وہ دوسری مائن کوڈیفیوزکرنےلگے، تبھی وہ ایکٹیوہوگیا اوراس میں دھماکہ ہوگیا۔

       

      اس دھماکہ میں میجرچتریش سنگھ بشٹ شہید ہوگئے اوران کے ساتھیوں کوسنگین چوٹیں پہنچیں۔غورطلب ہے کہ ایل اوسی سےمتصل نوشیرا میں ہفتہ کوپاکستان کی طرف سے مسلسل گولی باری کی جارہی تھی۔ جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بارڈرپارسے ہندوستانی پوسٹوں پرمسلسل فائرنگ کی جارہی تھی۔





      نیوزایجنسی اے این آئی کے مطابق آئی ای ڈی کوسرحد پارسے آنے والے دہشت گردوں نے لگایا تھا۔ حالانکہ اس حملے کی ابھی تک کسی بھی دہشت گرد تنظیم نے ذمہ داری نہیں لی ہے۔
      First published: