ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مولانا محمود مدنی کا مغربی بنگال اور بہار میں فرقہ وارانہ تشدد پر اظہار تشویش ، عملی اقدامات کا مطالبہ

جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے بہار اور مغربی بنگال میں جاری فرقہ وارانہ فسادات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ریاستی اور مرکزی سرکاروں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امن وامان کی بحالی کے لیے ہر ممکن عملی اقدامات کریں

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مولانا محمود مدنی کا مغربی بنگال اور بہار میں فرقہ وارانہ تشدد پر اظہار تشویش ، عملی اقدامات کا مطالبہ
مولانا محمود مدنی ۔ فائل فوٹو

نئی دہلی : جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے بہار اور مغربی بنگال میں جاری فرقہ وارانہ فسادات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ریاستی اور مرکزی سرکاروں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امن وامان کی بحالی کے لیے ہر ممکن عملی اقدامات کریں ۔ساتھ ہی ساتھ مولانا مدنی نے کرپشن اور فرقہ پرستی کے خلاف بہار سرکار کو اس کا عہد و پیماں یاد دلاتے ہوئے کہا کہ لفظی اقرار سے کچھ نہیں ہوتا بلکہ عملی طور سے اقدامات کی ضرورت ہے ۔

جمعیۃ علما ہند کی جانب سے جاری ایک بیان کے مطابق مولانا مدنی نے آسنسول مغربی بنگال کی نورانی مسجد کے امام مولانا امداداللہ رشیدی کے جذبہ کو مثالی قراردیا جنھوں نے فساد میں اپنے سولہ سالہ بچے کے قتل کے باوجود مقامی مسلمانوںکوجذباتی قدم اٹھانے سے پوری طاقت سے روکا اور کہا کہ وہ اپنے بچے کی جان کے بدلے کسی اور کی جان نہیں لینے دیں گے۔

مولانا مدنی نے مسلمانوں کو اسی طرح صبر کے ساتھ حالات کا مقابلہ کرنے کی تلقین کی اور کہاکہ نفرت کا جواب نفرت سے نہیں دیا جاسکتا، البتہ سیاسی شعور اور دانش مندی کے ساتھ مقامی ذمہ دار ہندو افراد کے ساتھ مل کر فرقہ پرستوں کے ارادو ں کو ناکام بنانے کی کوشش ہونی چا ہیے ۔انھوں نے جمعیۃ علماء کے مقامی ذمہ داروں کو بھی ہدایت کی کہ وہ متاثرہ علاقوں میں امن وامان قائم کریں اور متاثرین سے مل کر ان کی مدد کریں ۔

First published: Mar 30, 2018 11:23 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading