உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حلب میں بے گناہ شہریوں کا قتل عام حقوق انسانی کے علمبرداروں کے منہ پر طمانچہ: مولانا ارشد مدنی

    مولانا سید ارشد مدنی ۔ فائل فوٹو

    مولانا ارشد مدنی نے مزید کہا کہ یہ انتہائی افسو س کی بات ہے کہ داعش کے خاتمہ کے نام پر شام کے بے قصور مسلمانوں کا قتل عام کیا جا رہا ہے۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  جمعیۃ علما ہند کے صدر مولانا سید ارشد مدنی نے شامی فوج کے روس کے ساتھ مل کر حلب میں بے گناہ اور بے قصور شہریوں کے قتل عام اور شہر پر بمباری کر نے اور اسے پوری طرح تباہ و برباد کر دینے کی سخت مذمت کرتے ہوئے اقوام عالم اور بالخصوص اسلامی ممالک سے اس غیرا نسانی عمل اور جارحیت کے خلاف آواز بلند کرنے اور حلب میں بے بس مسلمانوں کے تحفظ کویقینی بنانے کے اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا۔ مولانا ارشد مدنی نے مزید کہا کہ یہ انتہائی افسو س کی بات ہے کہ داعش کے خاتمہ کے نام پر شام کے بے قصور مسلمانوں کا قتل عام کیا جا رہا ہے۔ خواتین اور بچیوں کی کھلے عام آبرو ریزی کی جا رہی ہے ، ضعیفوں اور بچوں کو بھی نہیں بخشا جا رہاہے ۔ روس اور شام کی فوجوں نے مل کر حلب کومکمل طور پر تباہ و برباد کر دیا ہے۔ ایک اندازہ کے مطابق شام میں اب تک لاکھوں شہریوں کوبمباری اور دیگر طریقوں سے ہلاک کر دیا گیا ہے۔


      مولانا مدنی نے کہا کہ یہ انتہائی شرمناک اور افسو س کی بات ہے کہ اس غیر انسانی اور ظالمانہ عمل پر پوری دنیا خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اور مسلم ممالک خاموش ہیں ۔ دنیا بھر کے حقوق انسانی کے علمبرداروں کو حلب میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کیوں نظر نہیں آ رہی ہے ؟ انہوں نے کہا کہ داعش اسرائیل اور اس کے ہمنوا ممالک کی ہی پیداوار ہے اوریہ قوتیں داعش کے خاتمہ کے نام پراصل میں ایک ایک کر کے تمام مضبوط اورخوشحال مسلم ممالک کو تباہ و برباد کردینے کی سازش کررہی ہیں اور اس سازش کے تحت اب تک کئی مسلم ممالک تباہ کئے جا چکے ہیں ۔ مولانا ارشدمدنی نے کہا کہ حلب کے جن مسلمانوں کوباغی اور دہشت گرد کہہ کر بشارالاسد کی حکومت روس کی مدد سے قتل کرا رہی ہے انہیں اقوام متحدہ نے اپوزیشن تسلیم کیا ہے۔ اس لئے اقوام متحدہ کو روس اور اس کے ہمنواؤں کی سخت سرزنش کرنی چاہئے ،جیسا کہ اقوام متحدہ کے جنرل سکریٹری بان کی مون نے اپنے سخت بیان سے اشارہ بھی دیا ہے۔


      انہوں نے اس معاملے میں ایران کے رول کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی اتحاد کی بات کرنے والا ایران حلب میں محض بشارالاسد کا اقتداربچانے کی خاطر بے قصورمسلمانوں کے قتل عام میں برابر کا شریک ہے جو انتہائی افسوسناک ہے۔ انہوں نے مسلم ممالک سے اپیل کی کہ آپسی اختلافات کو پس پشت ڈال کرعالم اسلام کو متحد کرنے میں اپنا رول ادا کریں تاکہ مسلمانوں کے خلاف دنیا بھر میں جاری نفرت، تشدد اور انتقام کی اس صورتحال پر قابو پایا جا سکے ۔

      First published: