ہوم » نیوز » No Category

ایران میں سعودی سفارت خانہ پرحملہ قابل مذمت: مولانا اصغرعلی سلفی

نئی دہلی۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے میڈیا کے نام جاری ایک بیان میں ایران میں مشتعل ہجوم کے ذریعہ سعودی سفارت خانہ پر ہوئے پر تشدد حملے اور آتش زنی کی پر زور مذمت کی ہے اور اسے بین الاقوامی قانون کی صریح خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

  • News18
  • Last Updated: Jan 05, 2016 07:27 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایران میں سعودی سفارت خانہ پرحملہ قابل مذمت: مولانا اصغرعلی سلفی
نئی دہلی۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے میڈیا کے نام جاری ایک بیان میں ایران میں مشتعل ہجوم کے ذریعہ سعودی سفارت خانہ پر ہوئے پر تشدد حملے اور آتش زنی کی پر زور مذمت کی ہے اور اسے بین الاقوامی قانون کی صریح خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

نئی دہلی۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے میڈیا کے نام جاری ایک بیان میں ایران میں مشتعل ہجوم کے ذریعہ سعودی سفارت خانہ پر ہوئے پر تشدد حملے اور آتش زنی کی پر زور مذمت کی ہے اور اسے بین الاقوامی قانون کی صریح خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی بہر صورت مذموم ہے اس کے بارے میں دہرا معیار اختیار کرنا عالمی امن کے لیے شدید خطرہ کا باعث ہوگا۔


ناظم عمومی نے کہا کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ۔ ایسے میں دہشت گردوں کے خلاف عدل وانصاف پر مبنی کارروائی کو کسی خاص عقیدہ یا مذہب سے جوڑنا کسی بھی طرح درست نہیں ہے۔ چہ جائیکہ مخصوص عقیدہ ومذہب کی بنیاد پر دہشت گردوں کی حمایت کی جائے اور مکمل قانونی کارروائی کے بعد انہیں سزا د ئیے جانے پر ان کی حمایت میں پر تشدد احتجاج کیاجائے اور بین الاقوامی قانون کی دھجیاں اڑائی جائیں۔ خاص طور سے ایسے وقت میں جب کہ ساری دنیا دہشت گردی اور انتہاء پسندی سے بے حال اور پریشان ہے ، سارے ممالک دہشت گردی کے خلاف سخت ترین کا رروائی کیے جانے پر متفق ہیں ، اور سعودی عرب دہشت گردوں سے برابر جوجھتے رہنے کے باوجود عدل وانصاف اور حکمت کے ساتھ اس کا قلع قمع اور سد باب کرتا ہے۔


مولانا نے کہا کہ  سعودی عرب کے ذریعہ مکمل عدالتی تقاضوں کو بروئے کار لاتے ہوئے دہشت گردوں کو قرار واقعی سزا دینے پر کسی خاص ملک کا احتجاج کرنا بلا واسطہ دہشت گردوں کی افسوسناک حمایت اور مذموم حوصلہ افزائی اور فتنہ وفساد کا ایک نیا دروازہ کھولنا ہے۔ اسے جلد بند ہونا چاہئے اور دہشت گردی مخالف اقدام میں ایک دوسرے کا معاون بننا چاہئے ۔ دہشت گردوں کی حمایت کر کے خطے میں مسائل پیدا کرنے سے پرہیز کرنا چاہئے۔


ناظم عمومی نے مملکت سعودی عرب کے بروقت اقدامات کی بھر پور ستائش کی ہے اور دہشت گردی کے خلاف عدل وانصاف اور رواداری برتنے میں اس کی امتیازی خصوصیات کو لائق تحسین اور خطے میں امن وشانتی کے قیام و استحکام کے لیے ضروری قرار دیا ہے۔

First published: Jan 05, 2016 07:27 PM IST