உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بابری مسجد تنازع کے عدالتی فریق ہاشم انصاری کا سانحۂ ارتحال ایک ملی خسارہ : مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی

    مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے امیر مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی: فائل فوٹو۔

    مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے امیر مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی: فائل فوٹو۔

    ناظم عمومی نے کہاکہ ہاشم انصاری ایک انتہائی مخلص،حوصلہ مند اورملت کے دردمندافراد کی فہرست میں اعلیٰ مقام پر فائز تھے۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      دہلی: مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی نے اخبار کے نام جاری اپنے ایک بیان میں بابری مسجد تنازع کے عدالتی فریق ہاشم انصاری کے سانحۂ ارتحال پر اپنے شدیدرنج وغم کا اظہارکیاہے اور ان کی موت کوملت اسلامیہ ہندکا بڑا خسارہ قرار دیاہے۔
      ناظم عمومی نے کہاکہ ہاشم انصاری ایک انتہائی مخلص،حوصلہ مند اورملت کے دردمندافراد کی فہرست میں اعلیٰ مقام پر فائز تھے۔انہوں نے پوری زندگی بابری مسجدقضیہ کی حمایت وپیرکاری کرتے ہوئے فعال کردار اداکیااوراپنی پیرانہ سالی، ناسازیٔ طبع اورمعاشی مشکل حالات کے باوجودملت کے لئے اپنی خدمات جاری رکھیں ، جنہیں آنے والی نسلیںکبھی فراموش نہیںکرپائیں گی۔وہ قانون کی بالادستی کے متمنی اور بابری مسجدقضیہ کے پرامن حل کے خواہش مند تھے اسی لئے ہرمذہب کے لوگ ان کا یکساں احترام کرتے تھے۔
      انہوں نے کہا کہ ان کے خیالات کی گہرائی وگیرائی اور ملت کے تئیں ان کے مخلصانہ جذبات کا اس وقت بخوبی اندازہ ہوا جب تقریبا ایک سال قبل مجھے اجودھیاکی آواز کے ایڈیٹراورمشہور صحافی یگل کشور شاستری کی معیت میں اجودھیاکے اندر ان کے گھر پرعیادت کی غرض سے حاضرہونے کا موقعہ ملا۔اس موقعہ پر ان کے کنبے کے افراد سے بھی ملاقات ہوئی اورگھریلوحالات کا علم ہوا۔
      First published: