ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

 چھ سالوں میں 5275 اقلیتی طلباء کو مولانا آزاد فیلو شپ دی گئی

رکن پارلیمنٹ عبد الخالق نے وزارت کی طرف سے ملے جواب پر ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جے آر ایف اور نیٹ اور یو جی سی کے معیار پر اسکالرشپ دینے کا طریقہ صحیح طریقہ نہیں ہے۔ ممبر پارلیمنٹ عبدالخالق نے کہا کہ اقلیتوں کے لئے وزارت اس کا درس دیتی ہے اور اقلیتی طلبہ پسماندہ بیک گراؤنڈ سے آتے ہیں ایسے میں قومی معیار پر اسکالرشپ کی بات کرنا درست نہیں ہے۔

  • Share this:
 چھ سالوں میں 5275 اقلیتی طلباء کو مولانا آزاد فیلو شپ دی گئی
علامتی تصویر

نئی دہلی۔ آسام سے کانگریس کے رکن پارلیمنٹ عبد الخالق نے وزارت اقلیتی امور کی مولانا آزاد فیلوشپ ، جو مولانا آزاد ایجوکیشن فاؤنڈیشن کی طرف سے پیش کی جانے والی ایک ہائر ایجوکیشن اسکالرشپ اسکیم ہے اس کے بارے میں سوالات اٹھائے ہیں ۔ در حقیقت ، رکن پارلیمنٹ عبد الخالق نے لوک سبھا میں یہ سوال پوچھا کہ پچھلے چھ سالوں میں وزارت کی طرف سے کتنی اسکالرشپ دی گئی ہے جس کے جواب میں وزارت کی طرف سے بتایا گیا کہ سال 2014 -2015 سے لے کر 2019 -2020 تک 6  برسوں میں 5275 فیلوشپس سے امیدواروں کو نوازا گیا ہے۔


رکن پارلیمنٹ عبد الخالق نے وزارت کی طرف سے ملے جواب پر ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جے آر ایف اور نیٹ اور یو جی سی کے معیار پر اسکالرشپ دینے کا طریقہ صحیح طریقہ نہیں ہے۔ ممبر پارلیمنٹ عبدالخالق نے کہا کہ اقلیتوں کے لئے وزارت اس کا درس دیتی ہے اور اقلیتی طلبہ پسماندہ بیک گراؤنڈ سے آتے ہیں ایسے میں قومی معیار پر اسکالرشپ کی بات کرنا درست نہیں ہے۔


رکن پارلیمنٹ عبد الخالق نے کہا کہ پچھلے 3 سالوں میں آسام کو 94 فیلو شپ ہی ملی ہیں جبکہ بنگال کو 307 ، اترپردیش کو 500 فیلو شپ دی گئی ہیں۔ عبدالخالق نے کہا کہ وزارت کی جانب سے پری میٹرک اور پوسٹ میٹرک اسکالرشپ دی جاتی ہے لیکن یہ  آسام کے بچوں کو نہیں مل رہی ہے۔ وہاں ایک گھوٹالہ جاری ہے۔ انہوں نے اس معاملے میں سی بی آئی انکوائری کا مطالبہ کیا۔ عبدالخالق نے کہا کہ وزارت مولانا آزاد فیلو شپ دینے کے لئے کوئی دوسرا طریقہ اپنا سکتی ہے یا ریاستوں کو بتا سکتی ہے یا  کسی اور طرح سے  اسکالرشپ دے سکتی ہے۔ مثال کے طور پر میرٹ کی بنیاد پر فیلو شپ دی جاسکتی ہے ، لیکن ابھی جس طرح سے اسکالرشپ دی جارہی ہے وہ ٹھیک نہیں ہے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Sep 27, 2020 03:04 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading