ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بھوپال انکاؤنٹر میں قیدیوں کو ہلاک کردینا ہندوستان کی جمہوریت پربدنماداغ اور انسانیت کا قتل : مفتی محفوظ الرحمان عثمانی

ظلم و زیاتی کے راستے پر چل کر تشدد اور انتہا پسندی کامقابلہ نہیں کیا جا سکتا ہے،ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے جہاں عدالت سپریم ہے،کون مجرم ہے اور کون مظلوم اس کا فیصلہ عدالتیں کرتیں ہیں،مگرکسی بھی شہری کو جیل سے نکال کر انکاؤنٹر میں ہلاک کردیناجمہوریت پربدنماداغ اور انسانیت کا قتل ہے

  • Pradesh18
  • Last Updated: Nov 02, 2016 11:01 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بھوپال انکاؤنٹر میں قیدیوں کو ہلاک کردینا ہندوستان کی جمہوریت پربدنماداغ اور انسانیت کا قتل : مفتی محفوظ الرحمان عثمانی
مفتی محفوظ الرحمان عثمانی ، فائل فوٹو

نئی د ہلی : ظلم و زیاتی کے راستے پر چل کر تشدد اور انتہا پسندی کامقابلہ نہیں کیا جا سکتا ہے،ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے جہاں عدالت سپریم ہے،کون مجرم ہے اور کون مظلوم اس کا فیصلہ عدالتیں کرتیں ہیں،مگرکسی بھی شہری کو جیل سے نکال کر انکاؤنٹر میں ہلاک کردیناجمہوریت پربدنماداغ اور انسانیت کا قتل ہے۔ 31 اکتوبر کو بھوپال کی سینٹرل جیل سے فرار ہوئے کالعدم تنظیم سیمی کے 8 مشتبہ ممبران کو انکاؤنٹر کے نام پر قتل کیے جانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے معروف عالم دین و ملی رہنما مفتی محفوظ الرحمن عثمانی بانی و مہتمم جامعۃ القاسم دارالعلوم الاسلامیہ سپول بہار نے کہاکہ جب سے ہندوستان میں مودی کی قیادت میں بی جے پی کی سرکار بنی ہے اقلیتوں پر پے درپے مظالم کے واقعات پیش آرہے ہیں۔اس وقت خوف و دہشت کا عالم یہ ہےکہ ایک عام ہندوستانی حق بات کہنے سے بھی کترانے لگا ہے۔ انہیں ہمہ وقت جھوٹے الزامات میں پھنسانے اورگرفتار کرکے جیل میں ٹھونس دیے جانے کا خوف ستاتا رہتا ہے۔

مفتی عثمانی نےکہاکہ جن مسلم نوجوانوں کو مبینہ فرضی انکاؤنٹر میں ہلاک کیا گیا ہے اس کی سچائی سب کے سامنے آچکی ہے اس کے باوجود حکومت کے لوگ انہیں ہشت گرد بتاکر ایک دوسرے کی پیٹھ تھپتھپانے میں مصروف ہیں،حالانکہ ان کی رہائی کے امکانات روشن تھے۔حکومت نے اس شرمندگی سے بچنے کےلئے ان کا قتل کرادیا۔انہوں نے اس پورے واقعہ عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے والے پولیس اہلکار اور اس کھیل میں ملوث سیاسی لوگوں کو سخت سے سخت سزا ملنی چاہئے۔

انہوں نے کہاکہ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ اور سوشل میڈیا پر چل رہی ویڈیو نے مدھیہ پر دیش کی بی جے پی حکومت کی پول کھول دی ہے، اس تصادم پر اٹھائے جارہے سوالات کا ان کے پاس کوئی جواب نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ بی جے پی حکومت آرایس ایس کے اشارے پر چل رہی ہے جو ہندوستان میں مسلمانوں کی سب سے بڑی دشمن ہے اور اسرائیل کے ظلم و بربریتکے فارمولے پر عمل پیراں ہے۔

مفتی محفوظ الرحمن عثمانی نے کہا کہ پہلے مختلف معاملات میں تعلیم یافتہ مسلم نوجوانوں کو گرفتار کیا جاتا ہے اور جب عدالت میں یہ ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں پیش کر پاتے ہیںتو اسی طرح کے فرضی انکاؤنٹر کا سہا رالیتے ہیں تاکہ ان کی جگ ہنسائی نہ ہو۔

First published: Nov 02, 2016 10:57 PM IST