உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجیہ سبھا الیکشن : مایا وتی کو کراس ووٹنگ کا اندیشہ ، اکھلیش سے مانگی ایس پی ممبران اسمبلیوں کی فہرست

    مایاوتی اور اکھیلیش یادو ۔ فائل فوٹو

    ملک کی 16 ریاستوں میں جمعہ کو راجیہ سبھا کے الیکشن ہونے والے ہیں ، ان میں اترپردیش کی 10 سیٹوں میں سے آخری سیٹ پر سب کی نظر ہے ۔

    • Share this:
    لکھنو : ملک کی 16 ریاستوں میں جمعہ کو راجیہ سبھا کے الیکشن ہونے والے ہیں ، ان میں اترپردیش کی 10 سیٹوں میں سے آخری سیٹ پر سب کی نظر ہے ۔ اس سیٹ پر بی ایس پی سپریمو مایا وتی نے بھیم راو امبیڈ کر امیدوار بنایا ہے ، جس کی سماجوادی پارٹی اور کانگریس حمایت کررہی ہے ۔ اب الیکشن میں محض چند گھنٹے رہ گئے ، ایسے میں مایا وتی کوئی موقع نہیں چھوڑنا چاہتی ہیں ،اس لئے انہوں نے سماجوادی پارٹی صدر اکھلیش یادو سے ان 9 ایس پی ممبران اسمبلی کی لسٹ مانگی ہے ، جو بی ایس پی امیدوار کیلئے ووٹ کرنے والے ہیں۔
    راجیہ سبھا الیکشن میں بی جے پی نے 10 ویں سیٹ کیلئے امیدوار اتار کر سیٹوں کا انتخاب الجھادیا ہے ۔ ایسے میں مایا وتی کو لگتا ہے کہ بی ایس پی کیلئے ایس پی کی حمایت حاصل کرنا آسان نہیں ہوگا۔ 10 ویں سیٹ کیلئے کراس ووٹنگ کے آثار ہیں ۔ مایا وتی کوئی رسک نہیں لینا چاہتی ہیں ۔ کراس ووٹنگ کے اندیشہ کو ختم کرنے کیلئے انہوں نے ایس پی ممبران اسمبلی کی فہرست طلب کی ہے۔
    در اصل اترپردیش کے گورکھپور اور پھولپور لوک سبھا سیٹوں کے ضمنی انتخابات میں بی ایس پی نے ایس پی کی حمایت کی تھی ۔ اس کے بدلے میں ایس سربراہ اکھلیش یادو نے کہا تھا کہ ان کی پارٹی راجیہ سبھا الیکشن میں بی ایس پی امیدوار کی حمایت کرے گی۔ گورکھپور اور پھولپور ضمنی انتخابات میں سماجوادی پارٹی کو بڑی کامیابی ملی تھی اور گورکھپور میں کافی طویل عرصہ کے بعد بی جے پی کو شکست کا سامنا کرنا پڑگیا تھا۔
    First published: