உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہڑتال سے دہلی بے حال، کوڑا اٹھانے خود سڑک پر اترے 'عآپ' کے وزرا، ارکان اسمبلی

    نئی دہلی۔ ملک کی راجدھانی دہلی میں تنخواہ نہ ملنے سے ناراض ایم سی ڈی کے ملازمین غیر معینہ مدت کے لئے ہڑتال پر ہیں اور ہڑتال کا آج پانچواں دن ہے۔

    نئی دہلی۔ ملک کی راجدھانی دہلی میں تنخواہ نہ ملنے سے ناراض ایم سی ڈی کے ملازمین غیر معینہ مدت کے لئے ہڑتال پر ہیں اور ہڑتال کا آج پانچواں دن ہے۔

    نئی دہلی۔ ملک کی راجدھانی دہلی میں تنخواہ نہ ملنے سے ناراض ایم سی ڈی کے ملازمین غیر معینہ مدت کے لئے ہڑتال پر ہیں اور ہڑتال کا آج پانچواں دن ہے۔

    • IBN Khabar
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ ملک کی راجدھانی دہلی میں تنخواہ نہ ملنے سے ناراض ایم سی ڈی کے ملازمین غیر معینہ مدت کے لئے ہڑتال پر ہیں اور ہڑتال کا آج پانچواں دن ہے۔ دہلی کے ہر حصے میں کوڑے کا انبار لگ گیا ہے۔ اس درمیان آج عام آدمی پارٹی کے کئی ارکان اسمبلی اور وزرا اپنے حامیوں کے ساتھ دہلی کی سڑکوں کو صاف کرنے میں لگ گئے ہیں۔

      بتا دیں کہ گزشتہ پانچ دن سے کیجریوال حکومت اور دہلی میونسپل کارپوریشن کے درمیان چل رہی رسہ کشی کے درمیان ڈیڑھ لاکھ ملازمین ہڑتال پر ہیں جس سے نہ تو اسکولوں میں پڑھائی ہو پا رہی ہے اور نہ ہی سڑکوں پر صفائی۔ یہی نہیں، ہڑتال میں ایم سی ڈی اسپتالوں کے قریب دو ہزار سینئر ڈاکٹر، پانچ ہزار ریزیڈنٹ ڈاکٹر اور 15 ہزار نرس بھی شامل ہیں۔

      اس کی وجہ سے لوگوں کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس ہڑتال سے پیدا بحران کب ختم ہو گا، اس کا جواب نہ تو کیجریوال حکومت کے پاس ہے اور نہ ہی ایم سی ڈی سنبھال رہی بی جے پی کے پاس۔

      عام آدمی پارٹی کے وزیر کپل مشرا کا کہنا ہے کہ اب ایم سی ڈی کے ملازمین کو اور ملک کے عوام کو بھی سمجھ میں آ گیا ہے کہ گڑبڑ کہاں ہوئی ہے، اس لئے بی جے پی نے بھی اب اس پر بولنا چھوڑ دیا ہے۔ ایم سی ڈی دہلی کی صفائی کرنے میں نااہل ہے، لیکن ہم دہلی کو کوڑے کا ڈھیر نہیں بننے دیں گے۔

       

       
      First published: