உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وسائل کی کمی کے سلسلے میں کونسلروں کا وزیر اعلی کی رہائش گاہ کے سامنے دھرنا

    نئی دہلی۔  اقتصادی بحران سے دو چار دہلی کے تینوں میونسپل کارپوریشنوں کے میئر کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کونسلروں نے آج صبح ہی وزیر اعلی اروند کیجریوال کی سرکاری رہائش گاہ پر دھرنا دینا شروع کر دیا۔

    نئی دہلی۔ اقتصادی بحران سے دو چار دہلی کے تینوں میونسپل کارپوریشنوں کے میئر کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کونسلروں نے آج صبح ہی وزیر اعلی اروند کیجریوال کی سرکاری رہائش گاہ پر دھرنا دینا شروع کر دیا۔

    نئی دہلی۔ اقتصادی بحران سے دو چار دہلی کے تینوں میونسپل کارپوریشنوں کے میئر کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کونسلروں نے آج صبح ہی وزیر اعلی اروند کیجریوال کی سرکاری رہائش گاہ پر دھرنا دینا شروع کر دیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  اقتصادی بحران سے دو چار دہلی کے تینوں میونسپل کارپوریشنوں کے میئر کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کونسلروں نے آج صبح ہی وزیر اعلی اروند کیجریوال کی سرکاری رہائش گاہ پر دھرنا دینا شروع کر دیا۔


      جنوبی کارپوریشن کے میئر سبھاش آریہ، شمال کے روندر گپتا اور مشرقی کارپوریشن کے ہرش ملهوترا کی قیادت میں بی جے پی کے کارپوریشن کونسلروں نے وزیر اعلی کی رہائش گاہ کے سامنے نعرے بازی کی۔ ان کا کہنا ہے کہ دہلی حکومت اپنے سیاسی فوائد کے لئے کارپوریشنز کو ان کے حصے کی رقم مختص نہیں کر رہی ہے، جس کی وجہ سے دہلی کے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔


      وزیر اعلی کو لکھے گئے خط میں یہاں میئروں نے کہا ہے کہ 2015-2016 کی دہلی حکومت کے بجٹ میں جو رقم کارپوریشنز کو الاٹ کی گئی تھی اس کا 13022 کروڑ روپیہ بقایا ہے۔ اسے فوری طور پر جاری کی جائے۔ چوتھے مالیاتی کمیشن کی سفارشات کو لاگو کیا جائے۔ اس کے علاوہ دہلی حکومت کے تحت مختلف اداروں اور بورڈ پر 600 کروڑ روپے کا پراپرٹی ٹیکس واجب الادا ہے اسے دیا جائے۔ کارپوریشنز نے 1179 کروڑ روپے کے عالمی سطح کے شیئر کو بھی فوری طور پر جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔


      واضح رہے کہ اقتصادی صورتحال سے پریشان کارپوریشنز کے صفائی ملازم گزشتہ دنوں ہڑتال پر چلے گئے تھے جس کی وجہ سے دہلی حکومت اور کارپوریشن ایک دوسرے پر الزام تراشی کررہے ہیں۔


      جنوبی دہلی کارپوریشن کے میئر سبھاش آریہ نے الزام لگایا کہ 2017 کے کارپوریشن انتخابات کو دیکھ کر سیاسی فائدہ اٹھانے کے لئے دہلی حکومت جان بوجھ کر کارپوریشنز کو الاٹ اور بقایا رقم دینے میں کترا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی حکومت بار بار مطالبہ کئے جانے کے باوجودہماری باتوں پر سنجیدگی سے غور نہیں کررہی ہے اور اس کا خمیازہ دہلی کے عوام کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔ انہیں وسائل کے باوجود کارپوریشن دارالحکومت کے لوگوں کے تئیں اپنی ذمہ داریوں کو نبھانے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھ رہے ہیں۔


      مسٹر گپتا نے کہا کہ دہلی حکومت نے صورت حال کی سنگینی کے پیش نظر فوری طور پر فنڈز جاری نہیں کی تو آئندہ دنوں میں تحریک مزید تیز کی جائے گی۔

      First published: