ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ تشدد: پولیس اہلکاروں کو جلانے یا مارنے کی کوششوں کا دعویٰ بے بنیاد

ریسکیو آپریشن کا ویڈیو کلپ جاری کرکے پولیس اہلکاروں کو جلا کر مارنے کی کسی سازش کو ثابت کرنے والی پولیس کی اس تھیوری پر مقامی ذمہ دران نے بھی سوال اٹھائے ہیں۔

  • Share this:
میرٹھ تشدد: پولیس اہلکاروں کو جلانے یا مارنے کی کوششوں کا دعویٰ بے بنیاد
علامتی تصویر

میرٹھ ۔ گزشتہ 20 دسمبر کو میرٹھ کے لساڑی روڈ، بھومیہ کا پُل اور ہاپوڑ روڈ پر تشدد کے واقعات پیش آئے تھے۔ ہاپوڑ روڈ پر سٹی ہاسپٹل کے سامنے تشدد کے دوران پتھر بازی سے بچنے کے لیے 30 سے زیادہ پولیس اہلکاروں نے سڑک کے سامنے گلی کے ایک گھر میں اور دکان میں پناہ لی اور تقریباً 2 گھنٹے بعد فورس  نے ان پولیس اہلکاروں کو اس جگہ سے ریسکیو کرایا۔ پولیس نے ریسکیو آپریشن کا ویڈیو کلپ بھی جاری کیا۔


وہیں، اس ویڈیو کے حوالے سے پولیس اہلکاروں کو جلانے یا مارنے کی کوششوں کے دعوے کی حقیقت ہم نے مقامی لوگوں اور چشم دیدوں سے جاننے کی کوشش کی تو تصویر کا دوسرا پہلو بھی نظر آیا۔ پولیس اہلکاروں کو اپنے گھر میں پناہ دینے والی ایک خاتون نے پولیس کے اس دعوے کو غلط بتایا ہے۔ مقامی خاتون کے مطابق تشدد کے دوران گھر میں پناہ لینے والے پولیس اہلکاروں کو گھر میں بند کرکے جلانے یا انہیں مارنے کی کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ پولیس نے خود ہی یہ کہانی بنا کر پیش کی ہے۔


ریسکیو آپریشن کا ویڈیو کلپ جاری کرکے پولیس اہلکاروں کو جلا کر مارنے کی کسی سازش کو ثابت کرنے والی پولیس کی اس تھیوری پر مقامی ذمہ دران نے بھی سوال اٹھائے ہیں۔

First published: Jan 16, 2020 11:57 AM IST