ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اس شہر میں پیدا ہوئے کورنٹائن اور  سینیٹائزر ، جانئے پورا معاملہ

یہ واقعہ ہے میرٹھ کا جہاں مودی پورم کے پبرسا گاؤں کے رہنے والے دھرمیندر اور وینو نے اپنے دو جڑواں بچوں کا نام کورنٹائن اور سنیٹائزر رکھا ہے۔

  • Share this:
اس شہر میں پیدا ہوئے کورنٹائن اور  سینیٹائزر ، جانئے پورا معاملہ
اس شہر میں پیدا ہوئے کورنٹائن اور  سینیٹائزر ، جانئے پورا معاملہ

میرٹھ ۔ کورونا وبا کے قہر اور خوف کے دوران لاک ڈاؤن سے لیکر کورنٹائن اور  سینیٹائزر جیسے الفاظ لوگوں کی جانکاری میں آئے اور زبان پر استعمال ہونے لگے ۔ لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ میرٹھ میں ایک والدین نے اپنے دو نوزائیدہ جڑواں بچوں کا نام ہی کورنٹائن اور  سینیٹائزر رکھ دیا ہے۔ یہ واقعہ ہے میرٹھ کا جہاں مودی پورم کے پبرسا گاؤں کے رہنے والے دھرمیندر اور وینو نے اپنے دو جڑواں بچوں کا نام کورنٹائن اور  سنیٹائزر رکھا ہے۔


دھرمیندر کے مطابق، ان کی نو ماہ کی حاملہ بیوی نے لاک ڈاؤن کے دوران بہت مشکلات کا سامنا کیا۔ پہلے تو کئی ڈاکٹروں نے کورونا کے خوف سے ڈیلیوری کروانے سے ہی منع کر دیا لیکن ڈاکٹر پرتیما تومر نے انکی مدد کی۔ حاملہ خاتون کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا اور ڈیلیوری کاروائی کی گئی۔ دھرمیندر بتاتے ہیں کہ کورونا وبا کے خطرے سے بچنے کے لئے جس طرح کورنٹائن اور  سنیٹائزر انفیکشن سے محفوظ رہنے کے لیے ضروری ہے تو ان دو الفاظ کی اہمیت بھی ثابت ہوتی ہے۔ چونکہ آج کے وقت میں  کورنٹائن اور  سنیٹائزر الفاظ سب سے زیادہ لوگوں کی زبان پر ہیں اور لوگوں کو محفوظ رکھنے کے استعمال میں ہیں ایسے میں ان کو خیال آیا کہ کیوں نہ ان نوزائیدہ بچوں کا نام بھی کورنٹائن اور  سنیٹائزر رکھ دیا جائے تاکہ یہ نام نہ صرف لوگوں کی زبان پر رہیں بلکہ کورونا وبا کے سبب لاک ڈاؤن کے دوران کے مشکل حالات میں ان کی جدوجہد، حوصلے اور جذبے کی بھی مثال بن جائے۔


بچوں کو جنم دینے والی خاتون وینو کے مطابق لاک ڈاؤن کے ان مشکل حالات میں بچوں کو صحت اور سلامتی کے ساتھ دنیا میں لانا نہ صرف اس کے لیے بلکہ ڈاکٹر کے لیے بھی ایک بڑا چیلنج تھا لیکن آخرکار سب کچھ بہتر رہا۔ ان مشکل حالات میں یادوں کو تازہ رکھنے کے لیے بچوں کا نام کورنٹائن اور  سنیٹائزر رکھا گیا۔

First published: May 28, 2020 09:43 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading