ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یو پی کے اس شہر میں بے روزگار نوجوانوں کا گینگ فرضی کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ ٹھگی کرکے لوگوں کو لگا رہا تھا لاکھوں کا چونا 

میرٹھ سائبر کرائم سیل کے ایس پی کے مطابق فرضی کریڈٹ کارڈ گینگ کا شکار ہوئے امت پاٹھک نام کے شخص کی شکایت پر سائبر سیل نے تحقیقات شروع کی اور سراغ حاصل کرکے گینگ کے دو شاطر نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔

  • Share this:
یو پی کے اس شہر میں بے روزگار نوجوانوں کا گینگ فرضی کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ ٹھگی کرکے لوگوں کو لگا رہا تھا لاکھوں کا چونا 
بے روزگار نوجوانوں کا گینگ فرضی کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ ٹھگی کرکے لوگوں کو لگا رہا تھا لاکھوں کا چونا 

میرٹھ کی سائبر کرائم سیل نے ایک ایسے معاملے پر سے پردہ اٹھایا ہے جو پڑھے لکھے  بے روزگار نوجوانوں کی شاطرانہ چالوں کو اجاگر کرتا ہے۔ میرٹھ سائبر کرائم سیل نے جعلی کریڈٹ کارڈ کے ذریعے لوگوں کو ٹھگنے والے گینگ کے دو شاطر نوجوانوں کو گرفتار کیا ہے جو اپنے دوسرے ساتھیوں کے ساتھ مل کر کریڈٹ کارڈ بنوانے کے نام پر لوگوں سے فارم بھروا کر اہم جانکاری حاصل کر لیتے تھے اور پھر اسی شخص کے نام کا کریڈٹ کارڈ بینک سے حاصل کرکے لاکھوں کا چونا لگا دیتے تھے۔


میرٹھ سائبر کرائم سیل کے ایس پی کے مطابق فرضی کریڈٹ کارڈ گینگ کا شکار ہوئے امت پاٹھک نام کے شخص کی شکایت پر سائبر سیل نے تحقیقات شروع کی اور سراغ حاصل کرکے گینگ کے دو شاطر نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔ پولیس کی پوچھ تاچھ میں سروش اور دانش نام کے ان شاطروں نے بتایا کہ وہ بی ایس سی اور بی کام گریجویٹ ہیں لیکن کافی وقت سے بے روزگار ہیں۔ نوکری نہ ملنے کی وجہ سے ان لوگوں نے ٹھگی کے ذریعے پیسہ حاصل کرکے اپنے اخراجات پورے کرنے کی کوشش کی۔


ملزمین کے مطابق یہ افراد بینک ملازم بن کر لوگوں کو کریڈٹ کارڈ بنوانے کے لیے راضی کرتے تھے اور پھر ایک فارم بھروا کر ان کی تمام اہم جانکاری اور شناختی کارڈ کی تفصیلات حاصل کر لیتے تھے اور پھر ان کے نام پر کریڈٹ کارڈ حاصل کرکے اُس کے  ذریعہ مختلف شاپنگ مال یا پیٹرول پمپس پر کارڈ سویپ کروا کر رقم حاصل کر لیتے تھے۔ ان شاطر ٹھگوں کے مطابق وہ اب تک اس طرح کئی افراد کو شکار بنا کر لاکھوں کا چونا لگا چکے ہیں۔ پولیس نے ان شاطروں کے پاس سے لیپ ٹاپ ، موبائل اور تقریباً ڈھائی لاکھ کی نقدی بھی برآمد کی ہے۔


 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 20, 2020 08:55 AM IST