ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وکاس دوبے معاملے کے بعد اب میرٹھ میں پولیس کے نشانے پر چار درجن سے زیادہ گینگ

میرٹھ میں ایسے چھوٹے بڑے 51 گروہ ہیں جو پولیس ریکارڈ میں میرٹھ سے آپریٹ کر رہے ہیں۔ لوٹ، قتل، وصولی اور رنگداری وصولی ان کا کام ہے۔

  • Share this:
وکاس دوبے معاملے کے بعد اب میرٹھ میں پولیس کے نشانے پر چار درجن سے زیادہ گینگ
وکاس دوبے معاملے کے بعد اب میرٹھ میں پولیس کے نشانے پر چار درجن سے زیادہ گینگ

میرٹھ ۔ کانپور کے گینگسٹر  وکاس دوبے کے پولیس پر حملے میں آٹھ پولیس اہلکاروں کے مارے جانے کے بعد سے یو پی پولیس نے وکاس کی تلاش میں زمین آسمان ایک کردیا ہے۔ وہیں صوبے میں اب دوسرے گینگسٹر بھی پولیس کے نشانے پر آ گئے ہیں۔ جرم اور جرائم پیشہ عناصر کے لئے بدنام  مغربی اُتر پردیش کے میرٹھ میں بھی چار درجن سے زیادہ گینگ اب پولیس کے نشانے پر ہیں۔


میرٹھ میں ایسے چھوٹے بڑے 51 گروہ ہیں جو پولیس ریکارڈ میں میرٹھ سے آپریٹ کر رہے ہیں۔ لوٹ، قتل، وصولی اور رنگداری وصولی ان کا کام ہے۔ وکاس دو بے کی طرح ان گینگسٹرز کے بھی پولیس میں مخبر ہیں اور تھانوں سے ان کی سانٹھ گانٹھ رہتی ہے۔ میرٹھ میں تعینات رہے ایک آئی جی نے دو سی او اور ایک انسپکٹر پر گینگسٹرز سے ساٹھ گانٹھ کی رپورٹ بھی انتظامیہ کو بھیجی تھی ان میں سے ایک سی او اور انسپکٹر کا تبادلہ بھی ہو گیا تھا۔ یہاں تک کہ کرائم برانچ کے کئی پولیس والوں کے بھی علاقے کے بڑے بڑے گینگسٹر سے تعلقات رہے ہیں۔


سشیل مونچھ ، انل دجانہ ، پرمود بھدوڑا ، اودھم سنگھ جیسے جرائم پیشہ مجرموں کا نام ان میں سر فہرست ہے ۔ یہ جرائم پیشہ مجرم چاہے جیل سے باہر ہوں یا جیل میں ہوں،  ان کا نیٹورک اور گینگ کام کرتا رہتا ہے۔ لیکن گزشتہ کچھ برسوں میں ان گینگسٹرز کے خلاف پولیس کاروائی میں ان کے کئی گرگے مارے بھی گئے ہیں ، لیکن وکاس دو بے والے معاملے کے بعد ایک بار پھر پولیس الرٹ پر ہے اور ان گینگسٹر پر نگاہ رکھ کر کاروائی کا منصوبہ تیار کر رہی ہے۔ حالانکہ وکاس اور اس کے ساتھیوں کے اب تک پولیس کی گرفت میں نہ آنے سے پولیس پر دباؤ بڑھ گیا ہے اور پورے صوبے میں الرٹ جاری ہے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 09, 2020 07:43 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading