ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستانی فوج کی سرحد پار محدود کارروائی، کئی دہشت گرد مارے گئے

نئی دہلی۔ ہندوستانی فوج نے کل رات جموں وکشمیر میں لائن آف کنٹرول پارکرکے پاکستان مقبوضہ کشمیر میں واقع دہشت گردوں کےکچھ لانچنگ پیڈ پر محدود فوجی کارروائی (سرجیکل اسٹرائک) کرکے متعدد ہشت گردوں کو مارڈالا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 29, 2016 02:27 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستانی فوج کی سرحد پار محدود کارروائی، کئی دہشت گرد مارے گئے
نئی دہلی۔ ہندوستانی فوج نے کل رات جموں وکشمیر میں لائن آف کنٹرول پارکرکے پاکستان مقبوضہ کشمیر میں واقع دہشت گردوں کےکچھ لانچنگ پیڈ پر محدود فوجی کارروائی (سرجیکل اسٹرائک) کرکے متعدد ہشت گردوں کو مارڈالا ہے۔

نئی دہلی۔ ہندوستانی فوج نے کل رات جموں وکشمیر میں لائن آف کنٹرول پارکرکے پاکستان مقبوضہ کشمیر میں واقع دہشت گردوں کےکچھ لانچنگ پیڈ پر محدود فوجی کارروائی (سرجیکل اسٹرائک) کرکے متعدد ہشت گردوں کو مارڈالا ہے۔ فوج کے ملٹری آپریشنز کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل رنبیر سنگھ نے وزارت خارجہ کے ترجمان کے ساتھ آج یہاں مشترکہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ ہندوستانی فوج کو اطلاع ملی تھی کہ سرحد پار کئی لانچ پیڈوں پر بڑی تعداد میں دہشت گرد دراندازی کے فراق میں ہیں۔ فوج نےکل رات ان کے خلاف محدود کارروائی کی جس میں بڑی تعداد میں دہشت گرد مارے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رات میں ہی اس آپریشن کو ختم کردیا گیا تھا۔


لیفٹنینٹ جنرل سنگھ نے کہا کہ انہوں نے پاکستان کے ملٹری آپریشنز کے ڈائریکٹر جنرل سے ٹیلی فون پر انہیں دہشت گردوں کے خلاف ہندوستانی فوج کی محدود کارروائی کی اطلاع دے دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آگے اس طرح کے مزید حملےکرنے کا ہمارا کوئی ارادہ نہیں ہے لیکن ہم نے اپنی تشویش کے بارے میں انہیں آگاہ کردیا ہے ۔انہو ں نے مزید کہا کہ دہشت گردوں کی ناپاک حرکتوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر وہ آگے کچھ کرتا ہے تو ہندوستانی فوج کسی بھی صورت حال سے نمٹنے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔  ذرائع نے بتایا کہ بھیم بر،ہاٹ اسپرنگ اور لیپا میں حملے کئے گئے۔دہشت گردوں کے خلاف کی گئی اس کارروائی میں اسپیشل فورس کے کمانڈو شامل تھے جنہیں بین الاقوامی سطح پر اعلی درجے کا کمانڈو مانا جاتا ہے۔اس کارروائی کے بارے میں صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی اور نائب صدر حامد انصاری کو اطلاع دےدی گئی تھی۔ وزیر دفاع منوہر پریکر اور قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال اس کارروائی کی نگرانی کررہےتھے۔


جموں و کشمیر میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر پاکستان کی جانب سے بار بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کئے جانے کی اطلاعات کے درمیان وزیراعظم نریندر مودی نے کابینہ کی دفاعی امورکی کمیٹی (سی سی ایس)کی آج یہاں ہوئی میٹنگ میں ایل او سی پر سکیورٹی کے حالات کا جائزہ لیا۔ میٹنگ میں مسٹر مودی کے علاوہ وزیردفاع منوہر پاریکر ،وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ،وزیر خزانہ ارون جیٹلی،وزیر خارجہ سشما سوراج،قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال،فوج کے چیف جنرل دلبیر سنگھ سہاگ وغیرہ موجود تھے۔ واضح رہے کہ جموں وکشمیر کے اڑی میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں ہندوستانی فوج کے 18جوانوں کے شہید ہونے کے بعد ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعلقات انتہائی کشیدہ ہوگئے ہیں۔پاکستانی فوج نے جموں وکشمیر کے پونچھ اور راجوری اضلاع میں لائن آف کنٹرول(ایل او سی) پر آج بلا اشتعال  فائرنگ کرکے پھر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔ پاکستان نے کل شام بھی پونچھ سیکٹر میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کی تھی۔


نواز شریف نے کارروائی کی مذمت کی


وہیں پاکستانی میڈیا کے حوالے سے خبر آئی ہے کہ پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف نے بیان دیا کہ ہم اس حملے کی مذمت کرتے ہیں۔ امن کی پہل کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔ دو جوانوں کو گنوانے پر نواز شریف کا کہنا ہے کہ وطن کے لئے جان دینے والے جوان شہیدوں کو ہم  شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔ ہندوستان ہماری ہمسائیگی کا غلط مطلب نہ نکالے۔ ہماری امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے۔ آئندہ اگر اس طرح کی کارروائی ہوئی تو پاکستان اس کا جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ پاکستان کے انٹر سروسز پبلک ریلیشنز نے کہا کہ ہندوستانی فوج نے بھيم بیر، ہاٹسپرنگ اور لپا سیکٹر پر دھاوا بولا۔

First published: Sep 29, 2016 12:52 PM IST