ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایم آئی ایم سربراہ اسد الدین اویسی نے عدم اعتماد تحریک کی حمایت کی ، بی جے پی حکومت پر لگائے سنگین الزامات

اسد الدین اویسی کا کہنا ہے کہ ان کی پارٹی عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت کرے گی ، کیونکہ بی جے پی نے ریاست کے تشکیل نو ایکٹ کو صحیح طریقہ سے نافذ نہیں کیا اور نوجوانوں کو روزگار دینے کا اپنا وعدہ پورا نہیں کیا

  • Share this:
ایم آئی ایم سربراہ اسد الدین اویسی نے عدم اعتماد تحریک کی حمایت کی ، بی جے پی حکومت پر لگائے سنگین الزامات
آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی: فائل فوٹو۔

نئی دہلی : آندھر پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ نہیں دئے جانے سے ناراض چندرا بابو نائیڈو کی تیلگو دیشم پارٹی کے این ڈی اے سے ناطہ توڑ لینے کے بعد اب سیاسی ہلچل تیز ہوگئی ہے ۔ جہاں ایک طرف ٹی ڈی پی بعد مودی حکومت کے خلاف الگ سے عدم اعتماد کی تحریک لانے کی تیاری کررہی ہے، وہیں دوسری طرف بی جے پی نے بھی آندھرا پردیش کے اپنے لیڈروں کو دہلی طلب کیا ہے۔

اس درمیان کئی سیاسی لیڈروں نے بھی عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت کا اعلان کیا ہے ۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اور ممبر پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت کا اعلان کیا ہے ۔ اسد الدین اویسی کا کہنا ہے کہ ان کی پارٹی عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت کرے گی ، کیونکہ بی جے پی نے ریاست کے تشکیل نو ایکٹ کو صحیح طریقہ سے نافذ نہیں کیا اور نوجوانوں کو روزگار دینے کا اپنا وعدہ پورا نہیں کیا ۔ علاوہ ازیں بی جے پی نے خواتین ، مسلمانوں اور اقلیتوں کے ساتھ بھی نا انصافی کی ہے۔

انتخابات سے قبل پارلیمنٹ میں اس طرح کا ریہرسل ہوتا رہتا ہے : نقوی

ٹی ڈی پی - این ڈی اے اتحاد ٹوٹنے پر بی جے پی لیڈر اور مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کا کہنا ہے کہ دیکھتے ہیں کہ پارلیمنٹ میں کیا ہوتا ہے ، کون سی پارٹی کس کی حمایت کرتی ہے ؟ یہ انتخابات کا سال ہے اور ہر ریاست کے اپنے اپنے مطالبات ہیں ۔ اس پر کسی طرح کا تبصرہ کرنا ہمارے لئے مناسب نہیں ہے ۔ یہ ایک روایت بن چکی ہے کہ انتخابات سے پہلے پارلیمنٹ میں ہمیشہ اس طرح کا ریہرسل ہوتا ہے۔

آندھرا پردیش کے لوگوں کو انصاف ملے : ملکا ارجن کھڑگے

ادھر کانگریس لیڈر ملکا ارجن کھڑگے نے کہا ہے کہ شروع سے ہم آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دئے جانے کے مطالبہ کی حمایت کرتے رہے ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ آندھرا پردیش کے لوگوں کو انصاف ملے ۔ جب پارلیمنٹ میں عدم اعتماد کی تحریک لائی جائے گی تب حکومت کی ناکامیوں پر بات چیت کی جائے گی ۔ ہم اس کیلئے کئی پارٹیوں سے بات کررہے ہیں۔
وعدہ خلافی کو معاف نہیں کیا جاسکتا : سیتارام یچوری
دریں اثنا سی پی ایم نے بھی بی جے پی حکومت کے خلاف لائی جارہی عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت کی ہے ۔ سیتا رام یچوری نے کہا کہ آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دئے جانے کی وعدہ خلافی کو معاف نہیں کیا جاسکتا ہے۔
ملک کو کسی ناگہانی سے بچانے کیلئے یہ ضروری : ممتا بنرجی
ادھر مغربی بنگال کی وزیر اعلی اور ترنمول کانگریس کی سربراہ ممتا بنرجی نے ٹی ڈی پی کے اس فیصلہ کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ ملک کو کسی ناگہانی سے بچانے کیلئے یہ ضروری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں سبھی اپوزیشن پارٹیوں سے اپیل کرتی ہوں کہ سبھی لوگ ساتھ آئیں تاکہ ملک کو اقتصادی ناگہانی اور سیاسی عدم استحکام سے بچایا جاسکے۔

First published: Mar 16, 2018 01:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading