ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزرا کے متنازع بیان پر لگام لگانے سے متعلق موڈیز کے انتباہ کی رپورٹنگ پر حکومت میڈیا سے ناراض

نئی دہلی:عالمی اقتصادی ساکھ کا تعین کرنے والی ایجنسی موڈیز کے ذریعہ وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنے وزیروں کو متنازع بیانات پر لگام لگانے کا مشورہ سے متعلق خبروں پر سخت ردعمل کرتے ہوئے حکومت نے آج کہا کہ اس نے موڈیز انالیٹکس سے وابستہ ایک جونیئر ایسوسی ایٹ اکنامسٹ کے ذاتی خیالات کی رپورٹنگ غیر ذمہ دارانہ اور توڑ مروڑ کر کی ۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 04, 2015 10:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزرا کے متنازع بیان پر لگام لگانے سے متعلق موڈیز کے انتباہ کی رپورٹنگ پر حکومت میڈیا سے ناراض
نئی دہلی:عالمی اقتصادی ساکھ کا تعین کرنے والی ایجنسی موڈیز کے ذریعہ وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنے وزیروں کو متنازع بیانات پر لگام لگانے کا مشورہ سے متعلق خبروں پر سخت ردعمل کرتے ہوئے حکومت نے آج کہا کہ اس نے موڈیز انالیٹکس سے وابستہ ایک جونیئر ایسوسی ایٹ اکنامسٹ کے ذاتی خیالات کی رپورٹنگ غیر ذمہ دارانہ اور توڑ مروڑ کر کی ۔

نئی دہلی:عالمی اقتصادی ساکھ کا تعین کرنے والی ایجنسی موڈیز کے ذریعہ وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنے وزیروں کو متنازع بیانات پر لگام لگانے کا مشورہ سے متعلق خبروں پر سخت ردعمل کرتے ہوئے حکومت نے آج کہا کہ اس نے موڈیز انالیٹکس سے وابستہ ایک جونیئر ایسوسی ایٹ اکنامسٹ کے ذاتی خیالات کی رپورٹنگ غیر ذمہ دارانہ اور توڑ مروڑ کر کی ۔


میڈیا میں خبریں آئی تھیں کہ موڈیز انالیٹکس کی رپورٹ میں مسٹر مودی کو آگاہ کیا گیا ہے کہ اگر وہ اپنے وزراء پر لگام نہیں لگاتے ہیں تو ہندوستان گھریلو اور عالمی سطح پر اپنا اعتبار کھودے گا۔


اطلاعات و نشریات کی وزارت نے آج یہاں جاری ایک بیان میں کہا کہ یہ حیران کن ہے کہ ہندوستانی میڈیا کا ایک طبقہ موڈیز انالیٹکس اور موڈیز انوسٹر سروسز کے درمیان فرق کرپانے میں ناکام رہا۔ موڈیز انالیٹکس صرف ایک ڈاٹا اور انالٹکس کمپنی ہے جب کہ موڈیز انوسٹرس سروسز ریٹنگ سروس فراہم کرتی ہے۔


بیان میں کہا گیا ہے کہ ہماری قومی بحث کو ثروت مند بنانے میں میڈیا کا بڑا رول ہے لیکن ایسے معاملات اس کی ساکھ کو سنگین نقصان پہنچاتے ہیں اور ان سے عام لوگوں کے درمیان غلط جانکاری جاتی ہے۔

First published: Nov 04, 2015 10:33 PM IST