ہوم » نیوز » No Category

آبروریزی کا شکار ہوئی لڑکی نے ہائی کورٹ کے حکم پر بچہ کو دیا جنم ، کنبہ میں چھائی مایوسی

بریلی میں ایک عصمت دری متاثرہ نے اپنے بچے کو جنم دیا ہے۔ تاہم شرمناک بات یہ ہے کہ اس نابالغ لڑکی کو بچے کی پیدائش کے وقت بھی انصاف نہیں ملا ۔

  • ETV
  • Last Updated: Oct 14, 2016 07:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
آبروریزی کا شکار ہوئی لڑکی نے ہائی کورٹ کے حکم پر بچہ کو دیا جنم ، کنبہ میں چھائی مایوسی
بریلی میں ایک عصمت دری متاثرہ نے اپنے بچے کو جنم دیا ہے۔ تاہم شرمناک بات یہ ہے کہ اس نابالغ لڑکی کو بچے کی پیدائش کے وقت بھی انصاف نہیں ملا ۔

بریلی : بریلی میں ایک عصمت دری متاثرہ نے اپنے بچے کو جنم دیا ہے۔ تاہم شرمناک بات یہ ہے کہ اس نابالغ لڑکی کو بچے کی پیدائش کے وقت بھی انصاف نہیں ملا ۔ اس نے پی ایچ سی پہنچ کر بچے کی ولادت کرانے کی گزارش کی ، لیکن شیرگڑھ پی ایچ سی نے وسائل کی کمی کی وجہ سے لڑکی کو ضلع اسپتال بھیج دیا۔ تاہم اسپتال پہنچنے سے پہلے ہی لڑکی نے ایمبولینس میں ایک بیٹے کو جنم دیا۔ فی الحال ماں بیٹے دونوں صحت مند ہیں۔

خیال رہے کہ بریلی کے تھانہ شیرگڑھ علاقہ میں تقریبا نو ماہ قبل ایک لڑکے نے نابالغ لڑکی کی عصمت دری کی تھی ۔ یہ معاملہ پنچایت، پولیس، انتظامیہ اور ضلع اسپتال سے ہوتا ہوا ہائی کورٹ تک پہنچا تھا۔ ہائی کورٹ نے کیس کی سماعت کے دوران حکم دیا کہ بچے کا اسقاط حمل نہیں کرایا جائے گا اور سی ایم او خود اس معاملہ کو دیکھے گا ۔ ہائی کورٹ کے حکم کے باوجود نہ تو آبروریزی متاثرہ کا ریگولر چیک اپ کیا گیا اور ہی نہ کسی نے اس کا حال چال پوچھا۔ گزشتہ رات متاثرہ لڑکی کی حالت بگڑی ، تو باپ اسے شیرگڑھ پی ایچ سی لے گیا ، لیکن پی ایچ سی انچارج نے وسائل کی کمی کا حوالہ دیتے ہوئے اسے ضلع اسپتال ریفر کر دیا۔ شیرگڑھ سے ضلع اسپتال آتے ہوئے متاثرہ لڑکی نے ایک بیٹے کو جنم دی دیا ۔

لیکن سوال یہ ہے کہ جس بچے کو اس لڑکی نے عدالت کے حکم پر جنم دیا ہے ۔ اس کی سماجی شناخت کیا ہوگی ؟ کون اس کا باپ کہلائے گا ؟ کیا معاشرے میں ایسا بچہ وہ مقام اور احترام حاصل کر سکے گا، جس کا وہ حقدار ہے۔ کورٹ کیا اس کے والد کو اس کے لئے پابند کر سکتا ہے کہ وہ اپنے اس بچے کے پرورش اور اس کو اپنا نام دینے کی ذمہ داری سنبھالے؟ کیا کورٹ کا انصاف ابھی نامکمل نہیں ؟

First published: Oct 14, 2016 07:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading