உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    PM Modi: بڑی خوشخبری! وزیر اعظم مودی 15 اگست کو تین طبی اسکیموں کاکریں گےآغاز

    وزیر اعظم نریندر مودی

    وزیر اعظم نریندر مودی

    نئی اسکیم تمام صحت کی خدمات کا احاطہ کرے گی تاکہ ہر فرد ان تک آسانی سے رسائی حاصل کر سکے۔ یہ ایک جامع نقطہ نظر کے ساتھ صحت کی دیکھ بھال کی سب سے بڑی اسکیم ہوگی۔ یہ اسکیم آئی ٹی سے چلنے والی ہوگی

    • Share this:
      وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) 15 اگست کو مجموعی صحت کی دیکھ بھال کے پروگرام کی نقاب کشائی کر سکتے ہیں، جو موجودہ طبی اسکیموں پر محیط ہوگا۔ ان منصوبوں سے واقف تین عہدیداروں نے کہا کہ نئی اسکیم کو عارضی طور پر پی ایم سماگرا سوستھیا یوجنا (PM Samagra Swasthya Yojana) کہا جاتا ہے۔ اس کا مقصد مساوی، سستی اور معیاری صحت کی دیکھ بھال تک عالمی رسائی فراہم کرنا ہے۔

      حکام نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ اس کے علاوہ مودی دو اور اسکیموں کا بھی آغاز کریں گے۔ طبی طریقہ کار انجام دینے کے لیے ڈاکٹروں کو بیرون ملک بھیجنے اور ملک میں طبی سیاحت کو فروغ دینے کے لیے ہیل ان انڈیا (Heal in India ) کا آغاز کریں گے۔

      سماگرا سوستھیا یوجنا اسکیم پی ایم جن آروگیہ یوجنا (PM-JAY)، آیوشمان بھارت ڈیجیٹل مشن (ABDM) اور PM آیوشمان بھارت ہیلتھ انفراسٹرکچر مشن (PM-ABHIM) پر محیاط ہوگی۔ نئی چھتری اسکیم نیشنل ہیلتھ مشن (National Health Mission) کی دوبارہ برانڈنگ ہوگی، یا اس کا ایک جدید ورژن ہوگا۔

      نئی اسکیم تمام صحت کی خدمات کا احاطہ کرے گی تاکہ ہر فرد ان تک آسانی سے رسائی حاصل کر سکے۔ یہ ایک جامع نقطہ نظر کے ساتھ صحت کی دیکھ بھال کی سب سے بڑی اسکیم ہوگی۔ یہ اسکیم آئی ٹی سے چلنے والی ہوگی اور یہ حکومت کی تمام بڑی فلیگ شپ اسکیموں جیسے PM-JAY، ABDM اور PM-ABHIM کو جذب کرے گی۔

      ایک اور اہلکار کے مطابق حال ہی میں وزیر اعظم کے سامنے تین اسکیمات کے بارے میں ایک تفصیلی پریزنٹیشن پیش کیا گیا تھا۔ تیسرے عہدیدار نے کہا کہ ہندوستان میں شفایابی کی سیاحت کو فروغ دینے کے لیے ادارہ جاتی طریقہ کار کو اختیار کیا جائے گا۔ اس خیال کے تحت ایک ایسا پلیٹ فارم بنانا ہے جو علاج کے لیے ہندوستان آنے والے بین الاقوامی مریضوں کو سہولت فراہم کرے گا۔ یہ ملکی اور غیر ملکی مریضوں کو پیکیج کی قیمتوں، سہولیات اور ملک کے کسی بھی حصے میں جس قسم کی خدمات کا علاج کروانا چاہتے ہیں اس کے مطابق ہندوستان میں ہسپتالوں کا انتخاب کرنے کی آزادی دے گا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      مثال کے طور پر کیرالہ ایسا ہی ایک پورٹل چلا رہا ہے، لیکن سفر کے لیے وزارت صحت کا پلیٹ فارم جامع ہوگا۔ مریض اپنی شکایات کی اطلاع دے سکتے ہیں اور ہسپتال کو فیڈ بیک ریٹنگ بھی دے سکتے ہیں۔ یہاں تک کہ مریض ہندوستان آنے سے پہلے اسپتال سے رابطہ کرکے ٹیلی میڈیسن حاصل کرسکتے ہیں۔ یہ پلیٹ فارم غیر ملکی مریضوں کو ان کی ضرورت کے مطابق کم مہنگے ہسپتالوں کی خدمات فراہم کرے گا۔

      یہ بھی پڑھیں:


      دی ہیل بائی انڈیا (The Heal by India) پہل ہمارے ڈاکٹروں اور دیگر طبی پیشہ ور افراد کو سرجری کرنے کے لیے دوسرے ممالک کا سفر کرنے کا موقع فراہم کرے گی، جس سے ایک صحت مند عالمی معاشرہ تشکیل پائے گا۔ نیشنل ہیلتھ اتھارٹی کی ہیلتھ پروفیشنل رجسٹری (HPR) اور ہسپتال کی سہولت رجسٹری (HFR) اس پلیٹ فارم کو بنانے میں ہماری مدد کر رہے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: