ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اب بھاگوت نے کہا : ایسا ماحول بنایا جائےکہ لوگ خود ہی بھارت ماتا کی جے کا نعرہ لگائیں

لکھنؤ: بھارت ماتا کی جے بولنے پر چل رہی بحث کے درمیان راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت نے کہا ہے کہ ایسا ماحول بنایا جائے کہ لوگ خود اپنی طبیعت سے یہ نعرہ لگائیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 28, 2016 02:59 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اب بھاگوت نے کہا : ایسا ماحول بنایا جائےکہ لوگ خود ہی بھارت ماتا کی جے کا نعرہ لگائیں
راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سربراہ موہن بھاگوت : فائل فوٹو۔

لکھنؤ: بھارت ماتا کی جے بولنے پر چل رہی بحث کے درمیان راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت نے کہا ہے کہ ایسا ماحول بنایا جائے کہ لوگ خود اپنی طبیعت سے یہ نعرہ لگائیں۔ دو روزہ دورے پر آج یہاں پہنچے مسٹر بھاگوت رججو بھیا میموریل بلڈنگ کا افتتاح کر رہے تھے۔ اس بلڈنگ میں آر ایس ایس کی ذیلی تنظیم بھارتیہ کسان یونین کا دفتر ہے۔

اس موقع پر موجود سنگھ کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مقدس نعرہ’بھارت ماتا کی جے‘کو کسی پر تھوپنے کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اپنے آدرشوں اور کاموں کو اتنا بلند کرلیں کہ لوگ مجبور ہوکر بھارت ماتا کی جے بولیں۔  آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم )کے صدر اور ممبر پارلیمنٹ اسد الدین اویسی کا بھارت ماتا کی جے نہیں بولنے كے بعد اس نعرے کو لے کر اٹھے تنازعہ کے درمیان مسٹر بھاگوت کا اس تعلق سے دیا گیا بیان کافی اہم مانا جا رہا ہے۔

سنگھ کے سربراہ نے کہا کہ اس عمارت سے اسی طرح کے کام کئے جائیں جس طرح کی شخصیات اس میں رہ چکی ہیں۔ تبھی اس عمارت کی اہمیت میں اضافہ ہوگا۔ اس عمارت میں نانا جی دیش مکھ، پنڈت دین دیال اپادھیائے، اٹل بہاری واجپئی، رججو بھیا جیسے لیڈر اس میں قیام کر چکے ہیں۔  مسٹر بھاگوت کے اس دورے کو اترپردیش میں آئندہ 2017 میں ہونے والے اسمبلی انتخابات سے بھی جوڑ کر دیکھا جا رہا ہے۔ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے سابق سرسنگھ چالک پروفیسر راجندر سنگھ عرف رججو بھیا کی کوششوں سے 1948 میں اس عمارت کا الاٹمنٹ ہوا تھا۔ اسی وقت سے سنگھ اسے اپنے دفتر کے طور پر استعمال کر رہا ہے۔

بھارتیہ جن سنگھ کی پہلی تاسیسی میٹنگ بھی اسی دفتر میں ہوئی تھی۔ بھارتیہ کسان سنگھ کے سرپرست ٹھاکر سنكٹا پرساد سنگھ کی کوششوں سے اس عمارت کو 2008 میں کسان سنگھ کے نام خرید لیا گیا تھا۔ بھارتیہ کسان سنگھ کے اس دفتر کو رججو بھیا کے نام سے وقف کیا گیا ہے۔  سنگھ نے مسٹر بھاگوت کی کارکنوں سے ملاقات کرنے اور غیر سیاسی پروگراموں میں حصہ لینے کی وسیع پیمانے پرتیاریاں کی ہیں۔ تاہم، سنگھ مسٹر بھاگوت کے پروگراموں کو غیر سیاسی بتا رہا ہے لیکن سنگھ سربراہ مسٹر بھاگوت کے آئندہ اسمبلی انتخابات اور ایودھیا میں رام مندر کے معاملے پر بند کمروں میں بات چیت کرنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق دو روزہ دورے میں مسٹر بھاگوت سنگھ کے پرچارکوں کے اجلاس میں سنگھ کے ساتھ اتر پردیش کے دیہی علاقوں میں شاخیں بڑھانے پر زور دے سکتے ہیں۔ مسٹر بھاگوت اس دوران کسانوں سے بھی خطاب کر سکتے ہیں۔ وہ مادھو سیواآشرم اور سنگھ کی میگزین راشٹردھرم کے پروگراموں میں بھی شرکت کریں گے۔

First published: Mar 28, 2016 02:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading