உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوپی اسمبلی انتخابات: ملائم سنگھ نے کارسیوکوں پر گولی چلانے کے فیصلہ کو صحیح ٹھہرایا

    سماج وادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ کو ایودھیا اور رام مندر کی یاد آ گئی ہے۔ آج ملائم نے کارسیوکوں پر گولی چلانے کو صحیح فیصلہ قرار دیا ہے۔

    سماج وادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ کو ایودھیا اور رام مندر کی یاد آ گئی ہے۔ آج ملائم نے کارسیوکوں پر گولی چلانے کو صحیح فیصلہ قرار دیا ہے۔

    سماج وادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ کو ایودھیا اور رام مندر کی یاد آ گئی ہے۔ آج ملائم نے کارسیوکوں پر گولی چلانے کو صحیح فیصلہ قرار دیا ہے۔

    • IBN Khabar
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ یوپی میں اسمبلی انتخابات سے پہلے سیاسی بیان بازی کا دور زور پکڑتا دکھائی دے رہا ہے۔ سماج وادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ کو ایودھیا اور رام مندر کی یاد آ گئی ہے۔ آج ملائم نے کارسیوکوں پر گولی چلانے کو صحیح فیصلہ قرار دیا ہے۔


      آج لکھنؤ میں ملائم نے کہا کہ ایودھیا میں اتحاد بچانے کے لئے گولی چلانی پڑی تھی۔ گولی چلوانے کے بعد میری تنقید ہوئی تھی، مجھے انسانیت کا قاتل کہا گیا تھا۔ سوله کی موت ہوئی تھی، اتحاد بچانے کے لئے سولہ کی جگہ تیس جانیں بھی لینی پڑتیں تو بھی لیتا۔ گولی نہیں چلتی تو مسلمانوں کا ملک پر سے اعتماد اٹھ جاتا، ملک سب کا ہے۔


      بتا دیں کہ ملائم سال بھر پہلے بھی کارسیوکوں کو لے کر ایسی ہی بات کہہ چکے ہیں۔ تب بھی انہوں نے کارسیوکوں پر گولی چلوانے کے فیصلے کو درست قرار دیا تھا۔ ملائم کا یہ بیان سیاسی حلقوں میں انتخابات سے عین پہلے ان کا انتخابی داؤ سمجھا جا رہا ہے۔

      First published: