ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

داعش کے ہاتھوں 39 ہندستانیوں کے اجتماعی قتل کی سرکردہ مسلم ملی رہنماوں نے کی شدید مذمت ، کہی یہ بات

ملت اسلامیہ ہند کے سرکردہ رہنماؤں نے عراق میں داعش کے ہاتھوں 39 ہندستانی ورکروں کے اجتماعی قتل کی انتہائی شدت سے مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مظلوم ہندوستانی مزدوروں کے قتل کی مجرم داعش عراق، شام اور دوسرے ممالک کے مظلوموںپر ظلم کی بھی راست ذمہ دار ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 22, 2018 07:18 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
داعش کے ہاتھوں 39 ہندستانیوں کے اجتماعی قتل کی سرکردہ مسلم ملی رہنماوں نے کی شدید مذمت ، کہی یہ بات
داعش کے ہاتھوں 39 ہندستانیوں کے اجتماعی قتل کی تصدیق کے بعد ان کے گھروں میں ماتم چھایا ہوا ہے ۔ فائل فوٹو

نئی دہلی: ملت اسلامیہ ہند کے سرکردہ رہنماؤں نے عراق میں داعش کے ہاتھوں 39 ہندستانی ورکروں کے اجتماعی قتل کی انتہائی شدت سے مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مظلوم ہندوستانی مزدوروں کے قتل کی مجرم داعش عراق، شام اور دوسرے ممالک کے مظلوموںپر ظلم کی بھی راست ذمہ دار ہے ۔ ان مظلوموں میں مسلم اور غیر مسلم سبھی شامل ہیں۔

یہاں جاری ایک بیان میں ملی رہنماوں نے جن میں جماعت اسلامی کے امیر مولانا جلال الدین عمری ، مرکزی جمعیت اہل حدیث کے امیر مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی ، شاہی امام وخطیب مسجد فتحپوری مولانا مفتی مکرم احمداور دوسرے شامل تھے ، اسی کے ساتھ اس وضاحت کا بھی اعادہ کیا کہ اسلام اور مسلمانوں کا داعش سمیت کسی بھی ایسی گمراہ تنظیم سے کوئی واسطہ نہیں جو اسلام کا نام لے کر اسلام کی جڑیں کھود رہی ہیں۔

ان رہنماوں نےمسلمانان ہند اور بالخصوص ملت کے نوجوانوں کو ان رہنماوں کو نصیحت وتاکید کی کہ وہ اس قسم کی تنظیموں سے دور رہیں اور ان کو اپنے علاقوں میں نہ پنپنے دیں۔داعش اور القاعدہ جیسی دہشت گرد تنظیموں کو ان گمراہ خوارج کی اولاد قرار دیتے ہوئے جن کو مسلمانان اوائل اسلام سے ہی گمراہ اور دین سے خارج سمجھتے آرہے ہیں، ان رہنماوں نے اس استدلال سے بھی کام لیا کہ داعش اور القاعدہ جیسی دہشت گرد اور گمراہ تنظیموں کو امریکہ اور اسرائیل جیسی طاقتوں نے کھڑا کیا ہے جو روز اول سے اسلام کے نام پر اسلام اور مسلمانوں کی بیخ کنی کررہی ہیں اوران کا اصل مقصد یہ ہے کہ اسلام اتنا بدنام ہو جائے کہ اسلام اور شریعت اسلامیہ کا نام لینے سے بھی لوگ کترائیں۔

بیان جاری کرنے والے ملی رہنماوں میں اسد الدین اویسی صدر مجلس اتحاد المسلمین ، پروفیسر سیف الدین سوز، پروفیسر سید طاہر محمود ، پروفیسر اخترالواسع ، ڈاکٹر منظور عالم ، محمد ادیب سابق ایم پی ، مفتی عطا الرحمن قاسمی صدر شاہ ولی اللہ انسٹیٹیوٹ، ڈاکٹر قاسم رسول الیاس، محمود پراچہ سینئر ایڈوکیٹ، آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے نوید حامد ، انیس درانی ، ڈاکٹرظفرالاسلام خان اور ڈاکٹر تسلیم رحمانی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ وزیر خارجہ سشما سواراج کے مطابق عراقی شہر موصل کے پاس ایک اجتماعی قبر میں 39 ایسی لاشیں ملیں جن کے ڈی این اے ٹسٹ سے واضح ہوگیا کہ یہ وہی ہندستانی ورکر ہیں جن کو داعش کے مجرموں نے 2014 میں یرغمال بنالیا تھا۔

First published: Mar 22, 2018 07:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading