ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مسلم لیگ اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن نے کیا مزدوروں کو امداد فراہم کرنے کا فیصلہ، حکومت سے طلب کی اجازت

آل انڈیا یونائتد مسلم لیگ اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن نے حکومت اتر پردیش سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کی تنظیموں کے اراکین کو پریشان حال مزدوروں کی امداد کرنے کی اجازت دی جائے۔ ج

  • Share this:
مسلم لیگ اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن نے کیا مزدوروں کو امداد فراہم کرنے کا فیصلہ، حکومت سے طلب کی اجازت
آل انڈیا یونائتد مسلم لیگ اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن نے حکومت اتر پردیش سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کی تنظیموں کے اراکین کو پریشان حال مزدوروں کی امداد کرنے کی اجازت دی جائے۔ ج

لکھنئو۔ آل انڈیا یونائتد مسلم لیگ اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن نے حکومت اتر پردیش سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کی تنظیموں کے اراکین کو پریشان حال مزدوروں کی امداد کرنے کی اجازت دی جائے۔ جس طرح سے بھوکے پیاسے مسافر و مہاجر مزدور سڑکوں پر بھوک اور سڑک حادثات کا شکار ہو رہے ہیں اس نے اب امن پسند اور انسانیت میں یقین رکھنے والے لوگوں کو ان کی مدد کے لئے باہر آنے پر مجبور کردیا ہے۔


مسلم لیلگ کے ریاستی صدر ڈاکٹر متین کہتے ہیں کہ اس سے پہلے کہ کوئی مزدور بھوک کی وجہ سے لقمہءِ اجل بنے ہم اس کو کھانا کھلا کر بچانا چاہتے ہیں انہیں ایسے بے یاور و مددگار اور بے سہارا چھوڑنا انسانیت کے خلاف ہے۔ اس ضمن میں مسلم لیگ کے ایک وفد نے ضلع انتظامیہ کے اعلیٰ افسروں سے ملاقات کر اس باب میں ہر ممکن امداد اور تعاون دینے کا ارادہ کیا ہے۔


یوتھ اسٹودُٹ فیڈریشن یو پی چیپٹر کے ریاستی سکرٹری محمد افضل نے کہا ہے کہ اگر ضلع انتظامیہ نے ہمیں اجازت دی تو ہم اپنے اور عوامی وسائل کے ذریعے مسافر مزدوروں کو  لکھنئو ہائی وے پر کھانا بھی کھلائیں گے اور قریب کے اسٹیشنوں تک پہنچانے کا بند وبست بھی کریں گی۔۔ اہم پہلو یہ ہے کہ حکومت اپنی ناکامیوں کے خلاف نہ کچھ سننا چاہتی ہے اور نہ غریبوں کے لئے کچھ بندوبست کررہی ہے بر سر اقتدار لوگوں کو سوچنا چاہئے کہ اعلانات ووٹروں اور بھکتوں کی ذہنی اور سیاسی غذا تو ہوسکتے ہیں۔ مزدوروں کا رزق اور پیٹ کی غذا نہیں۔




سماجی اور اخلاقی سطح پر خدمت کے جذبے رکھنے والے لوگ یہ بھی کہتے ہیں کہ۔ اس وقت حکومت اور سرکاری مشینری ناکام ثابت ہورہی ہے لیکن کورونا وبا کے اس دور میں نہ کسی پر تنقید کرنا اچھا لگتا ہے اور نہ خامیاں ظاہر کرنا مناسب ہے بس ہم یہ چاہتے ہیں کہ مذکورہ تنظیموں کے اراکین کو پاس جاری کردئے جائیں جس سے رات دن بھوکے پیاسے سفر کرنے والے مزدوروں کی کچھ مدد ہوسکے انہیں کچھ دیر کے لئے راحت کی سانس اور کھانا مل سکے۔ڈاکٹر متین نے اس سلسلے میں ایک خط اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ کو بھی ارسال کیا ہے جس میں کسی مالی امداد حاصل کرنے کا مطالبہ نہیں کیا گیا ہے ۔۔بلکہ لاک ڈاون کے دوران مزدوروں اور پریشان حال لوگوں کی امداد کرنے کی اجازت مانگی گئی ہے۔
First published: May 20, 2020 12:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading