ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اقلیتی امور کی مرکزی وزیر نجمہ ہپت اللہ نے دیا استعفی ، مختار عباس نقوی سنبھالیں گے ذمہ داریاں

نئی دہلی :اقلیتی امور کی مرکزی وزیر نجمہ ہپت اللہ نے مودی کابینہ سے استعفی دیدیا ہے اور ان کے استعفی کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے منظور بھی کرلیا ہے۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jul 12, 2016 08:48 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اقلیتی امور کی مرکزی وزیر نجمہ ہپت اللہ نے دیا استعفی ، مختار عباس نقوی سنبھالیں گے ذمہ داریاں
نئی دہلی :اقلیتی امور کی مرکزی وزیر نجمہ ہپت اللہ نے مودی کابینہ سے استعفی دیدیا ہے اور ان کے استعفی کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے منظور بھی کرلیا ہے۔

نئی دہلی :اقلیتی امور کی مرکزی وزیر نجمہ ہپت اللہ نے مودی کابینہ سے استعفی دیدیا ہے اور ان کے استعفی کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے منظور بھی کرلیا ہے۔ ان کی جگہ پر اب مختار عباس نقوی کو صدر جمہوریہ نے آزادانہ طور پر اقلیتی امور کی وزارت کی ذمہ داریاں سنبھالنے کیلئے کہا ہے۔

خیال رہے کہ کچھ روز قبل ہی مودی کابینہ میں بڑے پیمانے پر ردوبدل کیا گیا تھا اور 19 نئے چہروں کو شامل کیا گیا تھا۔ علاوہ ازیں کئی لیڈروں کے محکمے بھی تبدیل کئے گئے تھے ، جن میں مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی اور پرکاش جاوڑیکر شامل ہیں ۔







واضح رہے کہ مودی کابینہ میں ردوبدل سے قبل ایسی قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ نجمہ کی مودی کابینہ سے چھٹی تقریبا طے ہے ، مگر اس وقت ان کی جگہ برقرار رکھی گئی ۔ تاہم اب انہوں نے استعفی دیدیا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ نجمہ ہپت نے مودی حکومت کے بننے کے ساتھ ہی 26 مئی 2014 کو کابینی وزیر کی حیثیت سے حلف لیا تھا ۔ ان کو اقلیتی امور کی وزارت کی ذمہ داری سونپی گئی تھی اور وہ اس عہدہ پر دو سال سے زیادہ مدت تک رہیں۔
First published: Jul 12, 2016 08:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading