ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں وکشمیرمیں حالات کشیدہ، پی ڈی پی اورنیشنل کانفرنس نے بلائی ایمرجنسی میٹنگ

اس سےقبل مرکزی حکومت نے سیکورٹی وجوہات کا حوالہ دیتے ہوئے امرناتھ یاترا کو روک دیا تھا۔ اس کولےکرایک ایڈوائزری بھی جاری کی گئی ہے۔ وہیں مرکزی حکومت نے جموں وکشمیرمیں اضافی سیکورٹی اہلکارون کی تعیناتی بھی کی ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیرمیں حالات کشیدہ، پی ڈی پی اورنیشنل کانفرنس نے بلائی ایمرجنسی میٹنگ
جموں وکشمیرکے حالات کشیدہ ہیں، جس کے سبب نیشنل کانفرنس وار پی ڈی پی نے ایمرجنسی میٹنگ بلائی ہے۔ وہیں مرکزی حکومت نے امرناتھ یاترا کو روک دیا ہے۔

جموں وکشمیرمیں ان دنوں سیاسی ہلچل تیز ہوگئی ہے۔ موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے پیپلز ڈیموکریٹک فرنٹ (پی ڈی پی) اورنیشنل کانفرنس (این سی) اور پیپلزموومنٹ نے ایمرجنسی میٹنگ بلائی۔ اس میٹنگ کے لئے سبھی پارٹیوں نے اپنے اپنے نمائندے بھیجے۔ حالانکہ اس دوران کس موضوع پرتبادلہ خیال ہوا، اس کی اطلاع ابھی تک نہیں مل پائی ہے۔


اس سے قبل مرکزی حکومت نے سیکورٹی وجوہات کا حوالہ دیتے ہوئے امرناتھ یاترا کو روک دیا تھا۔ اس کو لے کرایک ایڈوائزری بھی جاری کی گئی ہے۔ وہیں مرکزی حکومت نے جموں وکشمیرمیں اضافی سیکورٹی اہلکارون کی تعیناتی بھی کی ہے۔ کشمیرکے ڈویژنل کمشنربشیرخان نے مقامی لوگوں سے اپیل کی ہے کہ لوگ ایسی افواہوں کو مت پھیلائیں۔ آئندہ کچھ روزمیں حالات کی کشیدگی کودیکھتےہوئے لوگ پٹرول پمپوں، اے ٹی ایم اورضروری اشیا کولینےکے لئےسڑکوں پراترآئے ہیں۔


امرناتھ یاتریوں کو واپس بلایا گیا


جموں وکشمیرمیں بارودی سرنگ ملنے کے بعد مرکزی حکومت نے سبھی امرناتھ یاتریوں کوواپس بلانےکا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے سبھی سیاحوں کوجموں وکشمیرسے واپس لوٹنے کا حکم جاری کردیا ہے۔ امرناتھ  یاترا کے راستے سے ہندوستانی فوج نے امریکی اسپائنر رائفل ایم -24  برآمد کی ہے۔ اس کےعلاوہ راستے سے پاکستان میں تعمیرشدہ کئی بارودی سرنگ بھی ملی ہیں۔

کشمیرمیں خوف کاماحول کانگریس لیڈرغلام نبی آزاد نے کہا ہے کہ کشمیرمیں خوف کا ماحول بن چکا ہے۔ وہیں سابق وزیر اعظم منموہن  سنگھ کی قیادت میں آج جموں وکشمیر پالیسی پلاننگ گروپ آف کانگریس کی میٹنگ ہوئی۔ وہیں کشمیرکے ڈویژنل کمشنربشیراحمد خان کے مطابق ضلع کے کسی بھی اسکول کوبند نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے لوگوں سے کسی بھی افواہوں پریقین نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مصدقہ اطلاعات کے لئے لوگوں کو اپنے متعلقہ ڈپٹی کمشنروں سے رابطہ کرنا چاہئے۔  





ہندوستانی فوج نے بیان جاری کرکےبتایا ہےکہ فی الحال علاقے میں آپریشن جاری ہے اور دیگربارودی سرنگوں کے ملنے کا بھی خدشہ ہے۔ ہندوستانی فوج نےجمعہ کوایک پریس کانفرنس کرکےبتایا کہ دہشت گردوں نےامرناتھ یاترا کونشانہ بنانےکا پلان بنایا ہوا تھا، اسی کی چھان بین کےتحت یاترا کے راستے سے پاکستان میں بنائی گئی بارودی سرنگ برآمد ہوئی ہیں۔ لیفٹیننٹ جنرل کےجےایس ڈھلن نےبتایا کہ ایک پاکستان نے بارودی سرنگ برآمد کی گئی ہے۔ اس سے واضح ہوتا ہےکہ پاکستانی آرمی ابھی بھی دہشت گردوں کا ساتھ دے رہی ہے، ہم اس بات کواب اوربرداشت نہیں کریں گے۔

پاکستانی آرمی وادی میں نہیں چاہتی  امن وامان

آرمی کی پریس کانفرنس میں ڈھلن کے ساتھ ڈی جی پی دلباغ سنگھ اورسی آرپی ایف کے آئی جی ذوالفقارحسن بھی موجود تھے۔ ڈھلن نےکہا کہ پاکستانی آرمی وادی میں امن وامان خراب کرنےکےارادے سےاس طرح دہشت گردوں کا ساتھ دے رہی ہے۔ حالانکہ ہندوستانی فوج نے واضح کیا ہے کہ امرناتھ یاترا کےعلاقے میں ابھی بھی سرچ آپریشن جاری ہے۔ ڈھلن کے مطابق فی الحال فوج کا نشانہ جیش محمد اورلشکرطیبہ جیسی تنظیموں کو وادی میں جڑسے ختم کرنا ہے۔
First published: Aug 02, 2019 09:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading