உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ملک میں قیام امن وامان کے لئے ہم سب کا مل جل کررہنا ہمارا قومی ودینی فریضہ ہے: مولانا اظہرمدنی

    قومی سمپوزیم سے خطاب کرتے ہوئے پنڈت این کے شرما۔

    قومی سمپوزیم سے خطاب کرتے ہوئے پنڈت این کے شرما۔

    سیمپوزیم میں دینی، علمی ،سماجی، سیاسی اور مذہبی شخصیات نے شرکت کرکے امن وامان کے قیام میں قومی یکجہتی پرزور دیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: آج جامعہ ابوبکر صدیق الاسلامیہ کے زیر اہتمام اقرا گرلس انٹرنیشنل اسکول ،جیت پور، نئی دہلی میں ’’امن و امان کے قیام میں قومی یکجہتی اور آپسی بھائی چارہ کے کردار‘‘ کے عنوان سے ایک قومی سیمپوزیم کا انعقاد ہوا جس میں ملک کی اہم دینی، علمی ،سماجی، سیاسی اور مذہبی شخصیات نے شرکت کی۔

      سیمپوزیم کے اہم مقرر، ممتاز صحافی و دانشور اور دہلی اقلیتی کمیشن کے چیئرمین ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ ملک کو قومی یکجہتی اور بھائی چارہ کی سخت ضرورت ہے۔ یہ ملک میں تمام مذاہب کے ماننے والوں اور تمام طبقات کی آواز ہے اور امن و شانتی کی آواز کو بلند کرنے کے لئے ملک کے کونے کونے میں اس طرح کے پروگرام کئے جانے کی ضرورت ہے۔

      مذہبی رہنما اور معروف سماجی کارکن پنڈت این کے شرما نے کہا کہ قومی یکجہتی اور امن و امان کی باتیں مولانا محمد اظہر مدنی کے لئے نئی نہیں ہے بلکہ یہ انہی بنیادوں پر قوم کے بچوں کی تربیت کرتے ہیں اور عوام کو اس کی تلقین کرتے ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے حکومت ہند اور اس کے وزرا کی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے حالات ٹھیک نہیں ہیں۔

      قومی سمپوزیم جامعہ ابوبکر صدیق الاسلامیہ کے مدیرمولانا محمد اظہر مدنی کے زیر صدارت منعقد ہوئی۔ انہوں نے قومی سیمپوزیم میں تشریف لائے ہوئے تمام مہمانوں کا دل کی گہرائیوں کے ساتھ شکریہ ادا کیا اور قرآنی تعلیمات اور اسوۂ نبوی کی روشنی میں اس ملک کے اندر قومی یکجہتی و بھائی چارہ کو عام کرنے کی ضرورت کو اجاگر کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ہماری مقدس کتاب قرآن مجید اور ہمارے نبی محترم کی زندگی سے یہی پیغام و درس ملا ہے کہ ہم جہاں جس معاشرہ میں رہیں وہاں فرقہ وارانہ ہم آہنگی، قومی یکجہتی اور بھائی چارہ کی فضا کو قائم رکھیں اور تمام مذاہب کے ماننے والوں اور تمام طبقات کے درمیان اخوت و محبت کو عام کریں۔

      اس سمپوزیم میں  مولانا زاہد رضا رضوی چیئرمین اتراکھنڈ مدرسہ بورڈ، پنڈت یوگل کشور شاستری مہنت سریو کنج مندر ایودھیا، نردائن دت شرما ، ایم ایل اے حلقہ بدرپور، کرشنا مینن جوائنٹ سکریٹری راجیہ سبھا، مولانا محمد ہارون سنابلی ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند، مفتی عطاء الرحمن قاسمی صدر شاہ ولی اللہ انسٹی ٹیوٹ نئی دہلی، ڈاکٹرتسلیم رحمانی صدر مسلم پولٹیکل فورم آف انڈیا،نامور صحافی سید منصور آغا، ڈاکٹر حسین مدور نائب صدر ندوۃ المجاہدین کیرالا، ایم ڈی تھامس بانی و ڈائرکٹر انسٹی ٹیوٹ آف ہارمونی اینڈ پیس اسٹڈیز نئی دہلی، شری شیامل کشور سنگھ ممبر آف فوڈ کارپوریشن حکومت ہند، ڈاکٹر محمد شیث ادریس تیمی کومیڈیاآرڈینیٹر مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند اور مولانا محمدعمیر مدنی نائب امیر صوبائی جمعیت اہل حدیث دہلی  وغیرہ نے خطاب کیا۔ اس قومی سیمپوزیم میں دیگر جن اہم شخصیات نے شرکت کی ان میں محمد رئیس فیضی، محمد فضل الرحمن ندوی، سعیدالرحمن نورالعین سنابلی، انجینئر قمرالزماں،محمدبن خورشیدمدنی وغیرہ کے نام اہم اور قابل ذکر ہیں۔
      First published: