உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بیان سے پلٹے سدھو، کہا- راہل گاندھی نے نہیں بھیجا تھا پاکستان

    فائل تصویر

    فائل تصویر

    سابق کرکٹر اور کانگریس کے رہنما نوجوت سنگھ سدھو نے کہا ہے کہ پارٹی صدر راہل گاندھی کی ہدایت پر وہ پاکستان کے کرتارپور نہیں گئے تھے

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      سابق کرکٹر اور کانگریس کے رہنما نوجوت سنگھ سدھو نے کہا ہے کہ پارٹی صدر راہل گاندھی کی ہدایت پر وہ پاکستان کے کرتارپور نہیں گئے تھے۔  سدھو نے ہفتہ کے روز ٹویٹ کیا،’غلط بیانی کرنے سے پہلے اپنی معلومات درست کر لیجیے۔ راہل گاندھی جی نے مجھے کبھی پاکستان جانے کے لیے نہیں کہا۔ پوری دنیا جانتی ہے کہ میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے انفرادی دعوت پر پاکستان گیا تھا‘۔
      قابل ذکر ہے کہ پنجاب کی کیپٹن امریندر سنگھ حکومت میں وزیر سدھو نے جمعہ کے روز حیدر آباد میں کہا تھا،’میں راہل جی کے کہنے پر پاکستان گیا تھا۔‘ حیدرآباد میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران انہوں نے اپنے وزیر اعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ کا مذاق بھی اڑاتے ہوئے کہا تھا،’ وہ فوج کے کپتان ہیں، میرے لیے کیپٹن راہل جی ہیں۔ راہل گاندھی امریندر سنگھ کے بھی کیپٹن ہیں۔‘
      یہ پوچھے جانے پر کہ جب وزیر اعلیٰ نے انھیں کرتار پور نہیں جانے کا مشورہ دیا تھا تو وہ کیوں گئے، سدھو کا کہنا تھا کہ کانگریس میں ہریش راوت، رندیپ سنگھ سورجے والا اور ششی تھرور جیسے کئی رہنما ہیں، جنھوں نے ان کے پاکستان کے سفر کو بہتر قدم بتایا ہے۔
      کیپٹن سنگھ نے خود پاکستان کی دعوت یہ کہتے ہوئے ٹھکرا دی تھی کہ دہشت گردی پھیلانے والے ملک کی دعوت کو وہ قبول نہیں کر سکتے۔ اس دوران پنجاب حکومت میں ایک وزیر نے کہا کہ سدھو کو کیپٹن امریندر سنگھ کی کابینہ میں رہنے کا اخلاقی حق نہیں رہ گیا۔
      First published: