ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اکالی دل سے علیٰحدگی چاہتے تھے سدھو، اس لئے بی جے پی چھوڑی: نوجوت کور

نئی دہلی۔ نوجوت سنگھ سدھو کے راجیہ سبھا سیٹ سے استعفی دینے کے ایک دن بعد ان کی بیوی نوجوت کور سدھو نے سامنے آکر اپنا ردعمل ظاہر کیا ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Jul 19, 2016 02:25 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اکالی دل سے علیٰحدگی چاہتے تھے سدھو، اس لئے بی جے پی چھوڑی: نوجوت کور
نئی دہلی۔ نوجوت سنگھ سدھو کے راجیہ سبھا سیٹ سے استعفی دینے کے ایک دن بعد ان کی بیوی نوجوت کور سدھو نے سامنے آکر اپنا ردعمل ظاہر کیا ہے۔

نئی دہلی۔ نوجوت سنگھ سدھو کے راجیہ سبھا سیٹ سے استعفی دینے کے ایک دن بعد ان کی بیوی نوجوت کور سدھو نے سامنے آکر اپنا ردعمل ظاہر کیا ہے۔ نوجوت کور نے کہا کہ اگر سدھو نے پارلیمانی سیٹ سے استعفی دے دیا ہے تو اس کا صاف مطلب سمجھ لینا چاہیے کہ انہوں نے پارٹی بھی چھوڑ دی ہے۔ سدھو کی بیوی نے ان کے استعفی کے پیچھے کوئی واضح وجہ تو نہیں بتائی لیکن اتنا ضرور کہا کہ سدھو چاہتے ہیں کہ بی جے پی پنجاب میں اکالی دل سے الگ ہو جائے۔


انہوں نے کہا کہ سدھو اب پنجاب کی خدمت کرنا چاہتے ہیں۔ انہیں ریاست سے باہر رکھنے کا کوئی مطلب نہیں تھا۔ عوام جس پارٹی کو منتخب کرے گی وہ اس کے ساتھ خدمت کریں گے، قیادت سے مطلب نہیں ہے۔ بی جے پی میں اپنی پوزیشن کے بارے میں نوجوت نے کہا کہ انہوں نے پارٹی سے استعفی نہیں دیا ہے، وہ اب بھی اپنے علاقے میں کام کر رہی ہیں۔


وہیں، پنجاب بی جے پی صدر وجے سانپلا نے الگ بیان دے کر شک وشبہ کو اور بڑھا دیا ہے۔ سانپلا نے کہا کہ سدھو اب بھی بی جے پی کے رکن ہیں۔ انہوں نے تو یہ بھی کہہ دیا کہ وہ سدھو کے بی جے پی چھوڑ نے کا تصور بھی نہیں کر سکتے ہیں۔ سانپلا نے کیجریوال پر کہا کہ کسی کو انہیں سنجیدگی سے لینے کی ضرورت نہیں ہے۔

First published: Jul 19, 2016 02:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading