உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہائی کمان نے منظور نہیں کیا نوجوت سنگھ سدھو کا استعفی ، ریاستی لیڈر شپ کو دیا مشورہ : ذرائع

    ہائی کمان نے منظور نہیں کیا نوجوت سنگھ سدھو کا استعفی ، ریاستی لیڈر شپ کو دیا یہ مشورہ : ذرائع

    ہائی کمان نے منظور نہیں کیا نوجوت سنگھ سدھو کا استعفی ، ریاستی لیڈر شپ کو دیا یہ مشورہ : ذرائع

    پنجاب کانگریس کے صدر نوجوت سنگھ سدھو کا استعفی پارٹی ٹاپ لیڈر شپ نے منظور نہیں کیا ہے ۔ کانگریس ذرائع کے مطابق ہائی کمان نے ریاستی لیڈر شپ کو ہدایت دی ہے کہ پہلے وہ معاملہ کو اپنی سطح پر حل کریں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : پنجاب کانگریس کے صدر نوجوت سنگھ سدھو کا استعفی پارٹی ٹاپ لیڈر شپ نے منظور نہیں کیا ہے ۔ کانگریس ذرائع کے مطابق ہائی کمان نے ریاستی لیڈر شپ کو ہدایت دی ہے کہ پہلے وہ معاملہ کو اپنی سطح پر حل کریں ۔ کیپٹن امریندر کے سگھ سدھو خیمے کی طویل تکرار کے بعد اب چرنجیت سنگھ چنی کے ساتھ بھی پریشانیاں بھی کم ہوتی نظر نہیں آرہی ہیں ۔

      نوجوت سنگھ سدھو نے کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی کو بھیجے گئے اپنے استعفیٰ میں لکھا تھا کہ ایک انسان کے کردار کا زوال سمجھوتے سے شروع ہوتا ہے۔ میں پنجاب کے مستقبل اور بھلائی کے ساتھ کبھی سمجھوتہ نہیں کرسکتا۔ ایسے میں، میں پنجاب کانگریس صدر کے عہدے سے استعفیٰ دیتا ہوں۔ میں کانگریس کے لئے کام کرتا رہوں گا‘۔


      قابل ذکر ہے کہ نوجوت سنگھ سدھو نے تقریباً دو ماہ پہلے ہی 23 جولائی کو پنجاب کانگریس کے صدر کا عہدہ سنبھالا تھا۔ نوجوت سنگھ سدھو نے سال 2019 میں اپنے مقامی بلدیاتی محکمہ سے ہٹائے جانے کے بعد ریاستی وزیر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ وہ سال 2017 اسمبلی انتخابات سے قبل بی جے پی چھوڑ کر کانگریس میں آئے تھے۔

      18 ستمبر کو امریندر سنگھ کے وزیر اعلیٰ عہدے سے استعفیٰ دینے کے بعد کانگریس قانون ساز پارٹی کا لیڈر منتخب کئے گئے چرنجیت سنگھ چنی کو 20 ستمبر کو پنجاب کا وزیر اعلیٰ بنائے جانے کے درمیان نوجوت سنگھ سدھو کا یہ قدم بے حد حیران کرنے والا بتایا جارہا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: