ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دفتر کے بعد باس نہیں کر پائے گا پریشان! لوک سبھا میں پرائیویٹ ممبرس بل پیش

اگر یہ بل قانون کی شکل لے لے گا تو آفس کے وقت کے بعد کئے گئے میل کا جواب نہ دینے پر کمپنی اپنے ملازمین کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کر پائے گی۔

  • Share this:
دفتر کے بعد باس نہیں کر پائے گا پریشان! لوک سبھا میں پرائیویٹ ممبرس بل پیش
اگر یہ بل قانون کی شکل لے لے گا تو آفس کے وقت کے بعد کئے گئے میل کا جواب نہ دینے پر کمپنی اپنے ملازمین کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کر پائے گی۔

این سی پی ایم پی سپریا سولے نے لوک سبھا میں ایک پرائیویٹ ممبر بل پیش کیا ہے جس کے بارے میں پڑھ کر ملک کے سارے نوکری پیشہ لوگ جھوم اٹھیں گے۔ اس کی خاص بات یہ ہے  کہ اس میں ایسا التزام ہے جس کے مطابق نوکری کرنے والے لوگ اپنے آفس وقت کے بعد کمپنی سے آنے والے فون کال اور ای میل کا جواب نہ دینے کا حق حاصل کر لیں گے۔


دی رائٹ ٹو ڈسکنیکٹ بل ملازمین کے اسٹریس اور ٹینشن کو کم کرنے کی سوچ کے ساتھ لایا گیا ہے۔ اس سے ملازمین کے نجی اور پروفیشنل زندگی کے درمیان ٹینشن کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔


اگر یہ بل قانون کی شکل لے لے گا تو آفس کے وقت کے بعد کئے گئے میل کا جواب نہ دینے پر کمپنی اپنے ملازمین کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کر پائے گی۔ اگر ملازمین طے شدہ وقت سے زیادہ کام کرتے ہیں تو اس کو اوور ٹائم مانا جائے گا۔

First published: Jan 10, 2019 08:28 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading