اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ہندوستانی فضائی ضروریات کی تکمیل کیلئے 4.5 جنریشن جیٹ طیاروں کی ضرورت، IAF کے سربراہ نےدیابیان

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    آئی اے ایف کے سربراہ نے مزید کہا کہ گڑودا VII مشق دونوں فضائی افواج کے لیے آپریشنز کے دوران ایک دوسرے کے بہترین طریقوں کو سیکھنے اور ان کو جذب کرنے کا ایک منفرد موقع ہے۔ انہوں نے دونوں فضائی افواج کے درمیان بڑھتے ہوئے باہمی تعاون پر بھی روشنی ڈالی

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai | Jammu | Hyderabad | Lucknow | Jammu
    • Share this:
      ایئر چیف مارشل وی آر چودھری نے منگل کے روز فرانسیسی فضائیہ کے ساتھ گڑودا VII مشترکہ فضائی مشق کے موقع پر کہا کہ ہندوستانی فضائیہ (IAF) کی فوری ضروریات کو پورا کرنے کے لیے 4.5 جنریشن کے لڑاکا طیاروں کے 5 تا 6 اسکواڈرن کی ضرورت ہوگی۔ آئی اے ایف کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان دفاعی اور دوطرفہ تعلقات کو ظاہر کرتے ہوئے ایئر چیف مارشل چودھری نے جودھ پور میں مشق کے دوران یہ بات کہی ہے۔

      آئی اے ایف نے ایک بیان میں کہا کہ دونوں نے ایک مشترکہ تربیتی مشن کے حصے کے طور پر مشق میں حصہ لیا جسے ایئر فورس اسٹیشن جودھپور سے اڑایا گیا ہے۔ اس معاملے سے واقف ایک آئی اے ایف اہلکار نے کہا کہ مشق کا مقصد دونوں فریقوں کے درمیان باہمی تعاون کو بڑھانا ہے۔ اے سی ایم چودھری نے چھان بین کے بعد کہا کہ ہمیں فوری ضروریات کو پورا کرنے کے لیے 4.5 جنریشن کے طیاروں کے 5 تا 6 سکواڈرن کی ضرورت ہے۔ ہر سکواڈرن 18 تا 20 فائٹر پر مشتمل ہے۔

      انھوں نے مزید کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ دنیا میں کہیں بھی مستقبل میں ہونے والے کسی بھی تنازع میں فضائی طاقت تنازع کے نتائج کا فیصلہ کرنے میں بہت اہم کردار ادا کرے گی۔ اس طرح کی مشقیں ہمیں اپنی صلاحیتوں کو نکھارنے کا موقع فراہم کرتی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      آئی اے ایف کے سربراہ نے مزید کہا کہ گڑودا VII مشق دونوں فضائی افواج کے لیے آپریشنز کے دوران ایک دوسرے کے بہترین طریقوں کو سیکھنے اور ان کو جذب کرنے کا ایک منفرد موقع ہے۔ انہوں نے دونوں فضائی افواج کے درمیان بڑھتے ہوئے باہمی تعاون پر بھی روشنی ڈالی، جو 2003 سے مشق کے ہر ایک ایڈیشن کے ساتھ ترقی کر رہی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: