ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیجریوال، دیگر کو چیف سکریٹری کے ساتھ مار پیٹ معاملے میں ضمانت

سب کی اس شرط پر ضمانت منظور کی گئی کہ وہ عدالت میں 50-50 ہزار روپے کا مچلكہ بھریں گے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 25, 2018 08:15 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیجریوال، دیگر کو چیف سکریٹری کے ساتھ مار پیٹ معاملے میں ضمانت
فائل فوٹو

دہلی کی ایک عدالت نے چیف سکریٹری انشل پرکاش مارپیٹ معاملے میں دہلی کے وزیر علی اروند کیجریوال، نائب وزیر اعلی منیش سسودیا اور عام آدمی پارٹی (عاپ) کے 11 دیگر ممبران اسمبلی کو جمعرات کو ضمانت منظور کر لی۔ یہ سب اس معاملے میں مطلوب تھے۔

دہلی پولیس نے انشل پرکاش کی شکایت پر عاپ کے رہنماؤں اور ایم ایل ایز کے خلاف معاملہ درج کیا تھا۔ ان کی شکایت تھی کہ 19 اور 20 فروری کی درمیانی شب مسٹر کیجریوال کی رہائش گاہ پر ان کے ساتھ اس وقت مار پیٹ کی گئی تھی جب انہیں ایک میٹنگ کے سلسلے میں بلايا گیا تھا۔


پولیس نے اس معاملےمیں تحقیقات کے بعد مختلف دفعات کے میں فرد جرم داخل کی تھی ۔ایڈیشنل میٹروپولیٹن مجسٹریٹ سمیر وشال نے دہلی پولیس کی جانب سے دائرفرد جرم کا نوٹس لیتے ہوئے کیجریوال اورسسودیا کے علاوہ 11 دیگر ممبران اسمبلی کو عدالت میں پیش ہونے کے لئے سمن جاری کئے تھے۔ آج ان سب کی اس شرط پر ضمانت منظور کی گئی کہ وہ عدالت میں 50-50 ہزار روپے کا مچلكہ بھریں گے۔


اس کے علاوہ ان تمام کو معاملے کی سماعت کے دوران عدالت میں موجود ہونے اور ثبوتوں کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہ کرنے اور گواهوں کو نہ دھمكی دینے سے متعلق عدالتی ہدایات پر بھی عمل کرنا ہوگا۔

ان سب کو عدالت کی اجازت کے بغیر ملک نہ چھوڑ نے کا بھی حکم دیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ مسٹر کیجریوال اور مسٹر سسودیا کو دہلی سے باہر جانے سے پہلے عدالت کی اجازت لینی ہو گی۔
First published: Oct 25, 2018 08:15 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading