உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قومی راجدھانی دہلی میں جفت اور طاق فارمولہ نافذ ، آئی ٹی او میں کاٹا گیا پہلا چالان

    نئی دہلی۔ آج سے دارالحکومت دہلی میں آلودگی پر لگام لگانے کے لئے کاروں کا طاق اور جفت فارمولہ لاگو ہو گیا ہے۔

    نئی دہلی۔ آج سے دارالحکومت دہلی میں آلودگی پر لگام لگانے کے لئے کاروں کا طاق اور جفت فارمولہ لاگو ہو گیا ہے۔

    نئی دہلی۔ آج سے دارالحکومت دہلی میں آلودگی پر لگام لگانے کے لئے کاروں کا طاق اور جفت فارمولہ لاگو ہو گیا ہے۔

    • IBN Khabar
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ آج سے دارالحکومت دہلی میں آلودگی پر لگام لگانے کے لئے کاروں کا طاق اور جفت فارمولہ لاگو ہو گیا ہے۔ فی الحال یہ فارمولہ بطورتجربہ صرف 15 دنوں کے لئے لاگو کیا گیا ہے۔ آج اس کے نافذ ہو جانے سے اگلے 15 دن تک دہلی اور این سی آر والے دہلی میں تاریخ کے مطابق ہی کار چلا سکیں گے۔


      اس فارمولہ کی خلاف ورزی کرنے پر آج دہلی کے آئی ٹی او میں مردل نام کے ایک شخص کا پہلا چالان کاٹا گیا۔ قانون کے مطابق 2000 روپے کا اس کا چالان کاٹا گیا۔


      آج پہلی تاریخ کو طاق نمبر کے ساتھ اس کی شروعات ہوگئی ہے۔ یعنی آج 1 تاریخ جو کہ طاق نمبر ہے، تو طاق نمبر کی کار والے لوگ آج اپنی کار استعمال کر سکیں گے۔ طاق یا جفت نمبر کار کے رجسٹریشن کا آخری نمبر ہے۔ وہیں اس پر عمل نہ کرنے پر 2 ہزار روپے کا جرمانہ لگے گا۔ تاہم یہ جرمانہ 1 دن میں ایک سے زیادہ بار نہیں ہو گا۔ ساتھ ہی کار بھی ضبط نہیں کی جائے گی۔ لیکن دہلی حکومت نے لوگوں سے گزارش کی ہے کہ وہ اس پر عمل کریں تاکہ سڑکوں پر کاریں کم ہوں جس سے آلودگی پر تھوڑی لگام لگ سکے۔

      تاہم طاق اور جفت فارمولے سے سی این جی کاروں کو راحت دی گئی ہے لیکن ان کے لئے آئی جی ایل پمپوں سے اسٹیکرز لینا ضروری ہے۔ بغیر اسٹیکرز والی کار کو راحت نہیں ملے گی۔ طاق اور جفت فارمولے کے لئے دہلی حکومت نے 3 ہزار نئی بسوں کا انتظام کرنے کا دعوی کیا ہے۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اس تجربہ کی قیادت کریں گے وہ کار پولنگ کے ذریعے اپنے دفتر جائیں گے۔ ان کے ساتھ ان کی سرکاری کار میں ٹرانسپورٹ کے وزیر گوپال رائے اور وزیر صحت ستیندر جین بھی جائیں گے۔

       

       

       
      First published: